ساہیوال: فنڈز کی عدم فراہمی پر ڈائیلسز سنٹر بند کرنے کا فیصلہ

ساہیوال(ایس این این ) گزشتہ سولہ برس سے حکومت اور نجی شعبے کے اشتراک سے چلنے والا ڈائلسز سنٹر بند کر نے کا فیصلہ کر لیا گیا. یہ بات گزشتہ روز ڈی ایچ کیو ساہیوال ڈائیلسز سنٹر کے بورڈ‌آف گورنرز کے چئیر مین شیخ محمد یونس نے یہاں صاحفیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتائی. انھوں نے کہا کہ نجی شعبے سے طے ہو نے والے ایم او یو کے تحت حکومت دو کروڑ روپے کی ادویات فراہم کرتی تھی مگر چار ماہ نے نہ تو ادویات کے لیے فنڈز فراہم کیے جا رہے ہیں اور نہ ایم او یو کی تجدید ہو رہی ہے. نجی شعبہ مخیر حضرات کے تعاون سے 2002 سے یہ سنٹر چلا رہا تھا اور بعد ازاں اسے حکومتی سرپرستی بھی حاصل ہو گئی تھی. گزشتہ چار ماہ سے حکومت کی جانب سے فنڈز رو دئیے گئے ہیں اور ڈسٹرکٹ ہسپتال کے ایم ایس نے ڈائیلسز سنٹر کو بند کرنے کے لیے مختلف حربے آزمانا شروع کر دئیے ہیں. 110 مریضوں کے ڈائیلسز کرنے والا یہ سنٹر اب بند کر دیا جائے گا. جس سے مریضوں کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑے گا. شیخ یونش نے کہا کہ ایم ایس کے نامناسب رویے اور فنڈز کی بندش کی بنا پر سنٹر بند ہوا تو حکومت خود اس کی ذمہ دار ہو گی. انھوں نے وزیر صحت پنجاب سلمان رفیق سے ایکشن لینے کا مطالبہ بھی کیا.

اپنا تبصرہ بھیجیں