خورشید شاہ نے سکھر ایئر پورٹ کو طعام گاہ بنا ڈالا

سکھر: پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے ایئر پورٹ سیکیورٹی قوانین کی دھجیاں بکھیر ڈالیں،حکومتی ادارے اور ایوی ایشن حکام بے بس، تفصیلات کے مطابق بے نظیر بھٹو کی دسویں برسی کے موقع پر خورشید شاہ کے حکم سے سکھر ایئر پورٹ کے مسافر لاؤنج کو ذاتی مہمان خانے میں تبدیل کردیا گیا۔ قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرسید خورشید شاہ نے بے نظیربھٹو کی دسویں برسی کے شرکا کیلئے پرتکلف ضیافت کا اہتمام کیا اور اس کیلئے انہوں نے سکھر ایئر پورٹ کو ذاتی اوطاق میں تبدیل کرڈالا، ایئرپورٹ آنے والے مسافروں کو لاؤنج کے ایک کونے میں بٹھادیا گیا۔ضیافت میں پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنماؤں ، سینیٹرز اور صوبائی اور قومی اسمبلی کے ارکان نے شرکت کی۔
اس موقع پر تمام حفاظتی امور کو بالائے طاق رکھ دیا گیا اور مسافروں کیلئے مختص لاؤنج میں قناتیں لگا کر مہمانوں کو دوپہر کا کھانا کھلایا گیا، یہ ضیافت دن گیارہ بجے سے شام تک جاری رہی، اس دوران لوگ بلا کسی روک ٹوک کے سکھر ایئرپورٹ کے لاؤنج میں آتے جاتے رہے۔سی اے اے ذرائع کا کہنا ہے کہ خورشید شاہ ہر سال برسی کے موقع پر یہی کرتے ہیں ، سکھر ایئرپورٹ کی انتظامیہ اور ایئرپورٹ سیکورٹی فورس کا عملہ خورشید شاہ کے سامنے بے بس ہوتا ہے۔
ذرائع کے مطابق سکھر ایئرپورٹ پر تعینات سول ایوی ایشن اتھارٹی کا جو افسر سید خورشید شاہ کو اس غیرقانونی عمل سے روکنے کی کوشش کرتاہے ، اس کا تبادلہ کردیا جاتاہے، خورشید شاہ کا موقف جاننے کیلئے ان کے رابطہ افسر سے کئی بار رابطے کی کوشش ہوئی لیکن فون اٹینڈ نہیں ہوا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں