ساہیوال، پرچہ تبدیلی سکینڈل، تعلیمی بورڈ کے کئی عہدے دار معطل

ساہیوال(بیورورپورٹ)تعلیمی بورڈساہیوال پرچہ تبدیل سکینڈل۔ڈپٹی سیکرٹری‘اسسٹنٹ کنٹرولرز‘سپرنٹنڈنٹ‘ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ اورڈسٹری بیوٹنگ انسپکٹرسمیت ذمہ داروں کو عہدوں سے ہٹادیاگیا،سیکرٹری ہائرایجوکیشن نے نوٹس لے لیا،انکوائری شروع،چیئرمین وکنٹرولرکاتردیدبیان ہوامیں اڑگیا،چیئرمین حافظ شفیق،کنٹرولرشہزادرفیق نے ماتحتوں کی قربانی دیکرخودکوبچالیا۔گزشتہ روزگورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج ساہیوال سنٹر21۔بی مارننگ شفٹ میں پرچہ تبدیل کردیاگیاتھااورمعاملات طے ہونے کے بعد امیدواروں کوسیکنڈشفٹ میں بلاکرکالج عمارت میں خفیہ مقامات پر بیٹھاکر پرچہ حل کروایاگیا،کنٹرولر امتحانات پروفیسر شہزاد رفیق نے صحافیوں اور پیپروں کو منیج کرنا تسلیم کرلیاتاہم موقف دینے سے گریزکیا۔بورڈانتظامیہ نے چند منظورنظرصحافیوں کو دفتربلاکرسب اچھاہے کی رپورٹ بتاتے ہوئے وقوعہ کی تردیدکی۔تحقیقاتی صحافی کی طرف سے پرچہ تبدیل ہونے کی خبرنشرہونے پرسیکرٹری ہائیرایجوکیشن سمیت ڈویژنل انتظامیہ حرکت میں آئی۔چیئرمین بورڈحافظ شفیق اورکنٹرولرامتحانات پروفیسرشہزادرفیق نے سرجوڑلئے اوررات کی تاریکی میں کمپیوٹرآپریٹرکوبلاکر سنٹرسپرنٹنڈنٹ انورطاہر‘زوہیب انور‘فرحان اورقاسم نیازکوعہدوں سے ہٹاکرانصراقبال کو بطورسپرنٹنڈنٹ‘حق نوازکوڈپٹی سپرنٹنڈنٹ اورذاکرحسین بھٹی کو ڈسٹری بیوٹنگ انسپکٹرتعینات کردیا۔اسی طرح ڈپٹی سیکرٹری رجسٹریشن علی ریاض کوعہدے سے ہٹاکر کنڈکٹ برانچ،اسسٹنٹ کنٹرولرکنڈکٹ برانچ محمودحسن غوری کو سیکریسی برانچ وایڈیشنل چارج ٹرانسپورٹ برانچ اوراسسٹنٹ کنٹرولر سیکریسی برانچ محمدافضل کورجسٹریشن برانچ میں تبدیل کردیا۔عوامی سماجی حلقوں نے صوبائی وزیرہائیرایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں سرفرازاورکمشنر ساہیوال ڈویژن علی بہادرقاضی سے اس بڑے سیکنڈل میں دیگرذمہ داران کاتعینات کرکے بلاتفریق کاروائی کامطالبہ کیاہے –

اپنا تبصرہ بھیجیں