سرکاری خزانے کو کروڑوں کا ٹیکا، ندیم کامران کے خلاف انکوائری

ساہیوال(ایس این این) ڈائریکٹر انٹی کر پشن ساہیوال بابر رحمن وڑائچ نے مسلم لیگ(ن) ضلع ساہیوال کے صدر اور ممبر پنجاب اسمبلی ملک ندیم کامران کے خلاف کمرشل ایریا کے پلاٹ کو کچی آبادی ظاہر کر کے الاٹمنٹ کروا کر سر کاری خزانہ کو بیس کروڑ روپے کا جھٹکا لگانے کے معاملہ کی انکوائری شروع کر دی ۔ڈائریکٹر انٹی کر پشن بابر رحمن وڑائچ نے دو گھنٹے تک ملک ندیم کامران سے سوالات اور انکوائری کی جس میں کمرشل ایریا کے 1کنال رقبہ کو کچی آبادی ظاہر کر کے سر کاری اثرو رسوخ کی بنیاد پر الاٹمنٹ کروا نے کے محکمہ مال کے ریکارڈ کو بھی قبضہ میں لے لیا اور کمرشل علاقہ میں کمرشل کاروبار کے متعلق بھی سوالات کئے ۔ڈائریکٹر انٹی کرپشن بابر رحمن وڑائچ کے مطابق مزید انکوائری جاری ہے اور ریکارڈ کو قبضہ میں لے کرمزید تفتیش کی جائے گی اور اگلی پیشی پر ملک ندیم کامران کو سوالنامہ دیا جائے گا جس میں کمرشل ایریا کو کچی آبادی ظاہر کر کے الاٹمنٹ کروانے کا معاملہ اور ذمہ دار آفیسروں کو بھی طلب کیا جائے گا۔آج کی انکوائری کے دوران ملک ندیم کامران ایم پی اے کے ہمراہ انکے وکیل بھی تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں