گورنر کے مسلسل ساہیوال کے دورے، دفتری نظام ٹھپ

ساہیوال(بیورورپورٹ)گورنر پنجاب کے ساہیوال میں پے درپے دور ے، تمام بیوروکریسی وسرکاری ملازمین پروٹوکول دینے پرمجبور،عوام رل گئی،وزیراعظم سے نوٹس لینے کامطالبہ۔پی ٹی آئی کی حکومت بننے کے بعد سے ہی گورنر پنجاب چوہدری سرور نے ساہیوال کے دورے شروع کر رکھے ہیں شادی،نجی وسرکاری تقریبات میں شرکت کی وجہ سے سرکاری ادارے،افسران اوردیگر ملازمین گورنر کی ساہیوال موجودگی تک کوئی دفتری فرائض انجام نہیں دے سکتے جسکی وجہ سے دفتروں میں آئے سائلین رل گئے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہورہاہے شہر میں مختلف قیاس آرائیاں چل رہی ہیں کہ گورنر پنجاب آئندہ انتخابات میں یہاں ساہیوال سے قومی یا صوبائی حلقہ سے الیکشن میں حصہ لینے کی خواہش رکھتے ہیں متعدد تقریبات میں پی ٹی آئی کے بانی دیرینہ اور قربانیاں دینے والے ورکرز کو دیوار کے ساتھ لگادیاگیا ہے دیرینہ کارکنوں کا کہناہے کہ ساہیوال میں ن لیگ سے وابستگی رکھنے والوں کو اہمیت دی جاتی ہے ساہیوال کے مسائل کی طرف حکومتی جماعت کے عہدیداران کوئی توجہ نہیں دے رہے شہریوں نے وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ ساہیوال کے مسائل پر توجہ دی جائے اور گورنر کے بے جا دوروں کی وجہ سے شہریوں کیلئے پیدا ہونے والی مشکلات کاتدارک کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں