ساہیوال بورڈ کا طلبا کے پرچے ویب سائیٹ پر ڈسپلے کرنے کا فیصلہ

ساہیوال(بیورورپورٹ) تعلیمی بورڈ ساہیوال کے بورڈ آف گورنرز کا اجلاس زیر صدارت چیئر مین و کمشنر ساہیوال ڈویژن ڈاکٹر فرح مسعودبورڈ آفس میں منعقد ہوا جس میں سال 2017میں میٹرک اور انٹر امتحانات میں اعلی کارکردگی پر طلبا و طالبات کو سکالر شپس دینے اور معروضی سوالات کے جوابات او رپیپرز کو بورڈ کی ویب سائٹ پر ڈسپلے کرنے کا فیصلہ کیا گیا تا کہ طلبا ء و طالبات اپنی کارکردگی کو خود جان سکیں اور بورڈ کی پیپر مارکنگ میں بھی ٹرانسپرنسی آئے۔کمشنر ڈاکٹر فرح مسعود نے ان اقدامات کی منظوری دیتے ہوئے کہا کہ طلبا ء و طالبات کی حوصلہ افزائی ان کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کیلئے ضروری ہے جس کیلئے مزید اقدامات بھی اٹھائے جانے چاہئیں۔اجلاس میں سیکرٹری بورڈ ڈاکٹر ذوالفقار ثاقب اور کنٹرولر حافظ فدا حسین کے علاوہ بورڈ ممبرز نے شرکت کی۔گورنمنٹ کالج اوکاڑہ کے پرنسپل کی نشاندہی پر کمشنر نے بورڈ کی سپورٹس کمیٹی کے تمام اراکین کو تبدیل کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ بورڈ کے زیر اہتمام ہونے والی کھیلوں کے مقابلے صرف ساہیوال میں ہی نہ کروائے جائیں بلکہ اوکاڑہ اور پاکپتن میں بھی ان کھیلو ں کا انعقاد کیا جائے تا کہ زیادہ سے زیادہ سکول ان میں شرکت کر سکیں۔انہوں نے جوابی کاپیوں کو چیک کرنے کیلئے تعینات کئے گئے سب ایگزامینرز اور ایگزامینرز کی غلطیوں پر ان کے خلاف سخت ایکشن لینے کی بھی ہدایت کی۔اجلاس میں بورڈ کی موجودہ عمارت کی ضروری مرمت کیلئے 10لاکھ روپے مختص کرنے اور کنٹرولر امتحانات کو رہائش کیلئے بورڈ کی عمارت میں 18ہزار روپے سالانہ کرایہ پر کمرہ الاٹ کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔اجلاس میں بورڈ ملازمین کے علاج معالجے کیلئے 3 نئے ہسپتالوں میں کڈنی اور لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ لاہور‘کڈنی سنٹر ملتان اور کڈنی سنٹر فیصل آباد کو بھی پینل میں شامل کرنے اور چیف سیکریسی آفیسر کے ساتھ کام کرنے والے ملازمین کی فراہمی کی بھی منظوری دی گئی۔کمشنر ڈاکٹر فرح مسعود نے بورڈ میں تعینات کلیریکل سٹاف کا ہر چھ ماہ بعد پرفارمنس ٹیسٹ لینے اور انہیں فوری تربیت فراہم کرنے کی بھی ہدایت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں