ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس ، شعیب شیخ اور ساتھیوں کو قید کی سزا

اسلام آباد(ایس این این) اسلام آبادکی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت نے ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس میں شعیب شیخ سمیت 23 ملزمان کو 7 سال قید اور 13 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنادی۔شعیب احمد شیخ کی اہلیہ عائشہ شعیب سمیت 3 ملزمان کو بری کر دیا۔ایف آئی اے کے وکیل نے دلائل میں موقف اختیار کیا کہ ایگزیکٹ کے خلاف کارروائی کسی میڈیا گروپ کی ایماءپر نہیں کی اگر سیکیورٹیز ایکسچینج کمیشن آف پاکستان اور پاکستان ٹیلی کمیو نیکیشن اتھارٹی نے اپنا کام نہیں کیا تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ ایف آئی اے بھی کارروائی نہ کرے۔ بعد ازاں عدالت نے شعیب شیخ سمیت تمام ملزمان کو مجموعی طور پر 20 سال قید کی سزا سنائی۔ شعیب شیخ اور دیگر ملزمان پر دفعہ 471 کے تحت 7 سال قید اور 5 لاکھ روپے جرمانہ ۔ دفعہ 468 کے تحت 7 سال قید اور 5 لاکھ روپے ۔ دفعہ 420 کے تحت 3 سال قید و 2 لاکھ روپے جرمانہ اور دفعہ 419 کے تحت 3 سال قید اور ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔عدالت نے اپنے حکم میں کہا کہ تمام سزاوں کا اطلاق ایک ساتھ ہو گا۔ملزمان کو منی لانڈرنگ اور الیکٹرانک کرائم کے الزامات سے بری قرار دیا گیا۔واضح رہے امریکی اخبار نے 2015 میں ایگزیکٹ کی جعلی ڈگریوں کا انکشاف کیا تھا۔ چیف جسٹس نے ایگزیکٹ جعلی ڈگری اسکینڈل کا از خود نوٹس لے رکھا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں