اگر غدار ہوں تو سر عام پھانسی دے دی جائے: نواز شریف

بونیر(ایس این این) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نواز شریف نے یہاں کے پی کے میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر میں غدار ہوں تو قومی کمیشن بنایا جائے تاکہ حساب کتاب ہو جائے۔بونیر میں جلسہ عام سے خطاب کے دوران نواز شریف کا کہنا تھا کہ کہ ہم نے دہشت گردوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر ان کا خاتمہ کیا، کراچی میں قیام امن ہماری کوششوں کا نتیجہ ہے۔ پاکستان کا آئین توڑنے اور ملک میں دہشت گردی کا بیچ بونے والے دور حاضر میں محب وطن ٹھہرے ہیں اور ہمیں وطن کے لیے قربانیوں کے باوجود غدار کہا جاتا ہے. اب الٹی گنگا نہیں بہے گی۔ اگر میں غدار ہوں تو قومی کمیشن بنایا جائے تاکہ حساب کتاب ہوجائے، جو مجرم ثابت ہو اسے سرعام پھانسی دی جائے۔ یہ کسی مخصوص لوگوں کا ملک نہیں ہم سب کا ہے، ہم ملک کو نقصان پہنچانے والی طاقتوں کے خلاف کھڑے ہوں گے۔نواز شریف نے کہا کہ 5 ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ کے الزام پر بھی کمیشن بننا چاہیے، ہم چیرمین نیب کو ایسے نہیں چھوڑیں گے، وہ بھی اس کمیشن میں پیش ہوں، چیرمین نیب کمیشن کے سامنے کہیں کہ میں معافی مانگتا ہوں اور گھر جاتا ہوں۔ عوام کے ووٹ کی حرمت کو پامال نہیں ہونے دیں گے، ملک کو نقصان پہنچانے والی طاقتوں کے خلاف کھڑے ہوں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں