چشمہ پاور پلانٹ کے 4 یونٹ بند،لوڈ شیڈنگ بڑھنے کا امکان

لاہور(ایس این این) نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی لمیٹڈ کی ہائی ٹرانسمیشن لائنز ٹرپ ہو گئی جس سے چشمہ پاور پلانٹ کے 4 یونٹ بند ہوگئے۔4 یونٹ خراب ہونے کی وجہ سے سسٹم میں سے 1200 میگاواٹ بجلی کم ہو گئی۔3600 میگاواٹ کے تین آر ایل این جی پلانٹس ٹیسٹنگ کی وجہ سے پہلے ہی بند ہیں۔ اس صورتحال کے پیش نظرعارضی طور پر ملک میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ میں اضافے کا امکان ہے۔گزشتہ شب پاکستان کے مختلف علاقوں‌میں رات گئے بجلی بند رہی جس سے گرمی کے ستائے ہوئے شہریوں‌کی رات جاگتے گزری. توانائی ڈویژن کے مطابق صوبوں سے کم طلب کی وجہ سے پن بجلی کی پیداوار میں کمی ہے اور نئے نیلم جہلم پلانٹس بھی ٹیسٹنگ پر ہیں۔ فوری طور پر 220 کے وی کی این ٹی ڈی سی لائنز بحال کر دی گئی ہیں تاہم چشمہ نیوکلیئر پلانٹس سے بجلی کی بحالی میں کچھ وقت درکار ہے۔آج شب چشمہ 1 اور چشمہ 2 کی بحالی کا امکان ہے تاہم چشمہ 3 اور چشمہ 4 سے بجلی بحال ہونے میں زیادہ وقت لگ سکتا ہے۔ سسٹم کی حفاظت کیلئے تمام بجلی تقسم کار کمپنیوں میں عارضی طور پر لوڈ مینجمنٹ شروع کردی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں