بجٹ اجلاس میں ہنگامہ، عابد شیر اور مراد سعید میں جھڑپ

اسلام آباد: (ویب نیوز)قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں پی ٹی آئی ارکان نے بجٹ پیش کرنے کے دوران وزیرِ خزانہ مفتاح اسماعیل کے ڈائس کا گھیراؤ کیا لیکن لیگی ارکان نے وزیرِ خزانہ کو اپنے حصار میں لے لیا۔ عابد شیر علی اور امجد نیازی کے دوران ہاتھا پائی ہوئی بعد ازاں مراد سعید اور عابد شیر علی میں جھڑپ ہوئی، حزبِ اختلاف نے ایوان سے واک آؤٹ بھی کیا۔اپوزیشن کا کہنا تھا کہ غیر منتخب نمائندے کو بجٹ پیش کرنے کا کوئی حق نہیں، اپوزیشن نے ایوان میں “گو مفتاح گو” “ووٹ کو عزت دو” کے نعرے لگا دئیے۔
شیریں مزاری سمیت پی ٹی آئی ارکان نے وزیرِ خزانہ کے ڈائس کا گھیراؤ کیا، بجٹ کی کاپیاں پھاڑ دیں اور مفتاح اسماعیل پر کاغذ پھینکے۔ اس موقع پر عابد شیر علی، رانا تنویر اور ریاض ملک سمیت حکومتی ارکان نے مفتاح اسماعیل کے گرد حصار بنائے رکھا۔اس موقع پر پی ٹی آئی رکن اسمبلی مراد سعید بے قابو ہو گئے، انہوں نے بینچوں کو پھلانگ کر آگے بڑھنے کی کوشش کی تو شہریار آفریدی سمیت کئی ارکان نے انھیں روک لیا۔مفتاح اسماعیل اپوزیشن ارکان کے شور شرابے پر مسکراتے رہے اور بجٹ تقریر جاری رکھی۔ قائدِ حزب اختلاف خورشید شاہ کے زیرِ قیادت اپوزیشن نے اجلاس سے واک آؤٹ کیا لیکن ایم کیو ایم کے ارکان نے ساتھ نہیں دیا، سپیکر کی ہدایت پر شیخ آفتاب اپوزیشن کو منا کر لائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں