ہاں میں فریادی ہوں، انصاف کی توقع نہیں: شاہد خاقان عباسی

سرگودھا(ایس این این) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ نیب عدالتوں سے انصاف کی توقع رکھنا فضول ہے. ایسی عدالتوں نے ہمارے گلے میں ہائی جیکر کا طوق ڈالا تھا۔سرگودھا میں جلسے سے خطاب کے دوران وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آصف زرداری اور پرویزمشرف ا دوار میں انتشار تھا.پاکستان میں صرف نواز شریف کے ترقیاتی منصوبے نظر آئیں گے۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نیب عدالتوں سے ہمیں انصاف کی کوئی امید نہیں، انہی عدالتوں نے ہمیں ہائی جیکر بنایا جب کہ ایک اقامہ پر منتخب وزیر اعظم کو فارغ کردیا اس سے ملک کو نا قابل تلافی نقصان پہنچا.
ہم نے عدالت کے فیصلے پر عہدہ چھوڑ دیا ، ان الزامات کی کوئی حیثیت نہیں جو ہم پر عائد کیے گئے۔
شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سینٹ کے انتخابات میں پیسے دے کر جس طرح چئیر مین منتخب کروایا گیا ہم اس طریقہ کار کو نہیں مانتے۔عزت کرسی کی محتاج نہیں. عمران خان نے زرداری پر ایم این اے خریدنے کا الزام لگایا اور انھی سے گٹھ جوڑ کر کے ہمیں ناکام بنانے کے لیے انھی کا چئیر مین منتخب کروایا.شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ مخالفین اس بات پر تکلیف میں مبتلا ہیں کہ میں نے چیف جسٹس سے ملاقات کیوں کی، میں نے چیف جسٹس سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا تشریف لے آئیں، میں نے آئینی اور حکومتی معاملات پر گفتگو کی اور ذاتی یا جماعتی بات کی بجائے ملک کی بات کی یہی میری فریاد تھی. میری گواہی چیف جسٹس ہی دے سکتے ہیں باقی سب مفروضے ہیں. ملک کی فریاد لے کر گیا تھا اس لیے فریادی تھا اور فریادی ہوں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں