ساہیوال:‌سیوریج کے پانی سے سبزیاں کاشت کرنے کا دھندہ

ساہیوال ( بیورورپورٹ) ساہیوال شہر کے نواح میں کچی پکی ہڑپہ روڈ پر 2کلومیٹر طویل سیوریج کے گندے پانی میں سبزیاں کاشت کرنے کا کاروبار عروج پر، گندے پانی کے تعفن اور غلاظت سے بیماریاں پھیلنے لگیں‘ شہریوں کا گزرنا محال ہوگیا ‘ محکمہ ماحولیات اور دیگر متعلقہ ادارے نے آنکھیں بند کررکھی ہیں‘ کمشنر ساہیوال سے اصلاح صورتحال کامطالبہ۔تفصیلات کے مطابق نواحی چکوک 95/6-Rاور 94/6-R میں گندے پانی سے سبزیاں اگانے کا منافع بخش دھندہ جاری تھا پنجاب فوڈ اتھارٹی نے اگی ہوئی فصلوں کو ہل چلاکر تباہ کیا تو یہ سلسلہ رک گیا مگر بعد ازاں اس دھندے میں ملوث لوگوں نے کچی پکی ہڑپہ روڈ کے ساتھ ساتھ چیک 94/6-R سے آرمی پبلک سکول کے قریب گندہ پانی جمع کر کے سبزیاں کاشت کرنا شروع کر رکھی ہیں۔ جسکی وجہ سے بے انتہا تعفن اور بیماریاں پھیلناشروع ہوگئیں۔ لوگ یہاں سے ناک اور منہ پر رومال رکھ کرگزرنے پر مجبور ہیں ۔ محکمہ ماحولیات اور دیگر ادارے میونسپل کارپوریشن ‘ضلع کونسل ‘محکمہ صحت عامہ ‘مجرمانہ خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ اہل علاقہ نے کمشنر ساہیوال سے مطالبہ کیاہے کہ ووہ اس طرف جلداز جلد ذاتی توجہ دیں اورضروری احکامات جاری کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں