راؤ انوار گرفتار، تحقیقات کے لیے جی آئی ٹی تشکیل

اسلام آباد(ایس این این) کراچی میں مبینہ پولیس مقابلے کےمفرور ملزم سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار سپریم کورٹ میں پیش ہوگئے، بعد ازاں انہیں عدالتی حکم پر عدالت سے نکلتے ہی گرفتار کرلیا گیا۔عدالت عظمیٰ نے راؤ انوار کی حفاظتی ضمانت منسوخ کردی۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے راؤ انوار سے کہا کہ اتنے دن کہاں چھپے تھے، آپ تو بہادر اور دلیر مشہور ہیں؟ یقین دہانی کے باوجود آپ نے عدالت پر اعتماد نہیں کیا۔اب آپ کے معاملات جے آئی ٹی کے سپرد کر رہے ہیں.سپریم کورٹ نے راؤانوار کی حفاظت یقینی بنانے کا حکم بھی دیا۔راؤ انوار کے وکیل نے کہا کہ میرے مؤکل نے عدالت کے سامنے سرینڈر کر دیا ہے۔جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ آپ نے عدالت کی عظمت کے سامنے سرینڈر کیا ہے، یہ کوئی احسان کی بات نہیں ۔
آپ عدالتوں کو خط لکھ تے رہے جن سے آپ کا تاثر درست نہیں رہا.سپریم کورٹ نے کیس کی آزاد انہ تحقیق کا حکم دیا.راؤ انوار سے تفتیش کے لیے سپریم کورٹ نےآفتاب پٹھان کی سربراہی میں 5 رکنی جے آئی ٹی تشکیل دی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں