رشوت خوری، ڈی سی آفس کے کلرک کی سروس ضبط

ساہیوال (ایس این این )ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل احمد خاور شہزاد نے ڈی سی آفس کے جونیئر کلرک ابو بکر صدیق کے خلاف رشوت لینے کی انکوائری کا فیصلہ سنا دیا -مذکورہ کلرک کی5سال کی سروس ضبط اور 80ہزار روپے ایک ماہ میں شکایت کنندہ کو واپس کرنے کا حکم -تفصیلات کے مطابق ڈی سی آفس میں تعینات جونیئر کلر ک ابو بکر صدیق نے اوور سیز پاکستانی شکایات سیل میں تعیناتی کے دوران ایک اوورسیز پاکستانی عمران حیدر سے شکایت کی داد رسی کے لئے 80ہزار روپے رشوت لی جس پر ڈپٹی کمشنر شوکت علی کھچی نے مذکورہ کلرک کو معطل کرتے ہوئے احمد خاور شہزاد کو انکوائری آفیسر مقرر کرتے ہوئے شکایت کی تحقیق کرنے کا حکم دیا -انکوائری کے دوران یہ بات ثابت ہوگئی کہ مذکورہ کلرک ابوبکر صدیق نے شکایت کنندہ نے مختلف قسطوں میں رشوت وصول کی جو براہ راست ملز م کے اکاؤنٹ میں ٹرانسفر ہوئی -شکایت درست ثابت ہونے پر انکوائری آفیسر /ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر احمد خاور شہزاد نے پیڈا ایکٹ2006کے تحت معطل جونیئر کلرک ابو بکر صدیق کو رشوت وصول کئے گئے 80ہزار روپے ایک ماہ میں شکایت کنندہ کو واپس کرنے اور اس کی 5سال کی سروس ضبط کرنے کی سفارش کی ہے –

اپنا تبصرہ بھیجیں