ساہیوال:‌ڈی ایچ کیو، آئی سی یو وارڈ مریضوں کے لیے نا کافی

ساہیوال(بیورورپورٹ)ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال میں صرف5بیڈز کاآئی سی یو وارڈ تمام شعبوں کیلئے نا کافی‘ مریضوں کی برھتی ہوئی تعداد کے پیش نظر آئی سی یو میں مزید بیڈز اورنیوروسرجری اور میڈیکل وارڈ کیلئے علیحدہ علیحدہ آئی سی یو بنائے جائیں‘شہریوں کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال میں روزانہ سینکڑو ں مریض علاج معالجے کیلئے آتے ہیں لیکن آئی سی یو صرف 5بیڈز پر مشتمل ہے جو ضرورت پوری کرنے کیلئے ناکافی ہے جس پر مختلف حلقے پریشان ہیں۔ شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ نیوروسرجری اور میڈیکل وارڈز کیلئے علیحدہ علیحدہ آئی سی یو بنائے جائیں تا کہ ایمرجنسی کی ضروریات پوری ہو سکیں۔اس سلسلے میں جب آئی سی یو کے انچار ج ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر مذمل حسین اور اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد شاہد سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ جنوری کے دوران انستھیزیا ڈیپارٹمنٹ نے 1178آپریشن کنڈکٹ کروائے ہیں اور آئی سی یو میں 24گھنٹے ایمرجنسی سروس فراہم کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ مرکزی آئی سی یو تمام ہسپتال کی ضروریات پوری کرنے سے قاصر ہے اس لئے میڈیکل وارڈز اور نیورو وارڈز کیلئے علیحدہ آئی سی یو بنائے جائیں جہاں مریضوں کی تعداد سب سے زیادہ ہوتی ہے۔اس کے علاوہ موجودہ آئی سی یو کی توسیع بھی فوری کی جانی چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں