ساہیوال: ن لیگ ،ورکرکنونشن کھانے پر کارکنوں میں دھینگامشتی

ساہیوال (ویب نیوز) مسلم لیگ ن کے ورکرز کنونشن میں بدنظمی‘ بھوکے کارکنان کھانے پرٹوٹ پڑے۔تفصیلات کے مطابق ہاکی سٹیڈیم میں مسلم لیگ ن کے وررکرز کنونشن میں صوبائی وزیر پلاننگ ملک ندیم کامران کی تقریر کے دوران بھوکے کار کنان کھانے پر ٹوٹ پڑے۔ دھکم پیل‘ایکدوسرے کے گریبان پکڑے‘گھونسوں اور ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال کیاگیا۔ ہنگامہ آرائی کے سبب صوبائی وزیر کی ادھوری تقریر کے دوران ہی کنونشن ختم کرناپڑا۔ ورکرز کنونشن کو کامیاب بنانے کیلئے کالجوں اور سکولوں میں چھٹی کروا کر طلبہ کو لایاگیا تھا طلبہ سارا دن جہا زچوک‘ پاکپتن چوک‘جوگی چوک میں ہلڑ بازی کرتے رہے جس سے شہریوں کو مشکلات جبکہ خوا تین کو طوفان بدتمیزی کا سامناکرنا پڑا۔کنونشن کاٹائم 2بجے اور کھانے کاٹائم 3بجے تھا لیکن حسب روایت کنونشن 4بجے کے بعد شروع ہوا اور 5بجے کے بعد صوبائی وزیر ملک ندیم کامران تقریرکررہے تھے کہ بھوکے کارکنان کھانے پر ٹوٹ پڑے اور ہنگامہ آرائی کے دوران کارکن اور طلباء آپس میں جھگڑ پڑے جس کے بعد پولیس نے مداخلت کرتے ہوئے لاٹھیاں برسائیں اور حالات کو کنٹرول کیا۔اس صورتحال سے صوبائی وزیر ودیگر ارکان اسمبلی اور مسلم لیگ ن کے عہدیداران انتہائی پریشان ہوئے۔یادر ہے ورکرزکنونشن انتظامات کیلئے صوبائی وزیر کی رہائش گاہ پربلائے گئے اجلاس میں بھی کھانے کے حوالے سے خوب بحث ہوئی تھی اور بعض لیگی ارکان نے کھانے کے موقع پر بدنظمی سے بچنے کیلئے اپنی تجاویز بھی دی تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں