ساہیوال: ڈی ایچ کیو کے مریضوں کو لاہور ریفر کیا جانے لگا

ساہیوال( بیورورپورٹ) ڈی ایچ کیوہسپتال میں ڈاکٹروں کی چپقلش ‘مریضوں کو لاہور ریفرکیاجانے لگا ‘مریض پریشان ‘اپنے 5سالہ بچے کو لاہور ریفر کرنے پر شہری کی اسسٹنٹ کمشنر دفترمیں دہائی ‘ ایم ایس تحریری طو ر پر لکھ کر دے تو آپریشن کرسکتاہوں ‘ڈاکٹر کا اعلان ‘اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کامطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق مردان کے رہائشی مزدور محمدنعیم کے 5سالہ بچے ارشاد کے گلے میں کرنسی سکہ پھنس گیا جسے ڈی ایچ کیو ہسپتال داخل کرایا تو ڈاکٹر یوسف سلیمی نے 12گھنٹے بچے کو وارڈ میں رکھ کر لاہور ریفر کردیا جس پر مذکورہ شخص اسسٹنٹ کمشنر عرفان انور کے دفتر پہنچ گیا اور اپنی روداد سنائی تو اسسٹنٹ کمشنر مذکورہ شہری کو اپنے ہمراہ گاڑی میں ہسپتال لے آیا تو ایم ایس ڈاکٹر اعجاز حیدر نے ساراملبہ ڈاکٹر یوسف اور وارڈ پروفیسر ڈاکٹر طارق پر ڈال دیا ۔جبکہ ڈاکٹر یوسف نے کہا کہ ایم ایس اور پروفیسر میڈیکل کالج تحریری طور پر لکھ کر دے دیں تو ابھی آپریشن کردیتاہوں ۔ مذکورہ بچے کو کیمرہ اور مشینری کی سہولت نہ ہونے کا کہہ کر جناح ہسپتال لاہور ریفر کردیا گیا ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ایم ایس اور پروفیسر وارڈ نے ڈاکٹر یوسف کی نظر کمزور ہونے کا لکھ کر اہم آپریشن کرنے سے منع کر رکھا ہے ۔ مختلف حلقوں نے کمشنر ودیگر متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ مریضوں کو لاہور ریفرکرنے کا سختی سے نوٹس لیاجائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں