ساہیوال: مغوی لڑکی کے ورثا کاپریس کلب کے باہر احتجاج

ساہیوال (بیورورپورٹ ) 15 سالہ لڑکی کے اغواء کے ملزمان آزاد گھوم رہے ہیں‘ پولیس ملزمان سے سازبازہوکر گرفتارنہیں کررہی‘ لڑکی کے والدین کا پریس کلب کے باہر شدیداحتجاج‘ ملزمان کی گرفتاری کامطالبہ‘ ملزمان عبوری ضمانت پرہیں‘ حقائق اس کے برعکس ہیں‘ ایس ایچ اوکاموقف۔ تفصیلات کے مطابق بابامست کالونی کے رہائشی شوکت علی اورشکیلہ شوکت ودیگر نے پریس کلب کے باہر احتجاج کیااورالزام عائد کیا کہ ان کی بیٹی مدیحہ ندیم کو اغواء کرنے والے ملزمان کو پولیس گرفتارنہیں کررہی۔ والدین نے بتایا کہ 15سالہ بیٹی مدیحہ ندیم برائے میلاد النبی ؐ بطورشاگرد تجلی بی بی کے گھرپانچ ماہ سے جارہی تھی جہاں سے تجلی بی بی نے ایک ماہ سے سدرہ بی بی کے پاس بیوٹی پارلر میں ٹریننگ پربھجوادیااور وہاں سے تجلی بی بی وغیرہ پاکپتن لے گئے اور اسے اغواء کرلیا ملزمان کے خلاف تھانہ فریدٹائون پولیس نے مقدمہ درج کرلیا لیکن پولیس ملزمان سے سازباز ہوچکی ہے اورملزمان کو گرفتارنہیں کررہی۔ اس سلسلہ میں ایس ایچ او تھانہ فریدٹائون ذیشان ڈوگر سے رابطہ کیاتوانہوں نے کہا حقائق اس کے برعکس ہیں ملزمان 20جنوری تک عدالت سے عبوری ضمانت پر ہیں اس لئے ضمانت منسوخ ہونے پرانہیں گرفتار کیاجاسکتاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں