مجھے نکالنے سے پاکستان میں ترقی رک گئی: نواز شریف

لاہور: سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ مجھے اقامہ پر نکالے جانے کے بعد پاکستان میں ترقی رک گئی ہے، جب میرے خلاف فیصلہ آیا تو اسٹاک انڈیکس54 ہزار تھا، آج 38 ہزار ہے، اب تحریک عدل چلا رہا ہوں ،عدل کی تحریک کامیاب ہونے تک اس پر ڈٹے رہوں‌گا۔ مجھ پر آج تک دس روپے کی کرپشن بھی ثابت نہیں ہوسکی۔لاہور میں مسلم لیگ ن کے سوشل میڈیا کنونشن سے خطاب میں سابق وزیر اعظم نےکہا کہ جلاوطنی کے بعد جب میں‌پاکستان واپس آیا تو پاکستان دہشت گردی کی زد میں تھا، 20 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ تھی۔ہم نے دہشت گردوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر مقابلہ کیا اور 4 ماہ قبل اسے ختم کردیا، میں نے لوڈشیڈنگ کا تماشا ختم کیا، بجلی کے بے حساب کارخانے لگادیے۔ آج بجلی طلب سے زیادہ ہے۔نواز شریف نے کہا کہ اگر کارکنوں کا یہی جذبہ رہاتو پتہ نہیں الیکشن میں کیا ہوگا، مخالفوں کے منصوبے دھرے کے دھرے رہ جائیں گے، مسلم لیگ تاریخی کامیابی حاصل کرے گی۔انھوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ہم عدل کی بحالی کا پرچم اٹھائیں، 2018 میں مخالفین کو کلین بولڈ کریں گے۔ اور سیاست سے باہر ہنکال دیں گے۔ سابق وزیراعظم نے کہا کہ آپ کو ہماری چار سالہ کارکردگی معلوم ہے، نوازشریف ہمیشہ مشکل کام کو ہاتھ ڈالتاہے اور اسے پورا کرتا ہے، شہبازشریف نے میرے کندھے سے کندھا ملاکر ساتھ دیا، ہم نے وہ منصوبے مکمل کیے جو بیس بیس سال مکمل نہیں ہوتے۔ ایک خاندان پر بےبنیاد الزامات پر کئی ریفرنس دائر ہوجاتے ہیں۔ جن کو نااہل ہونا چاہیے تھا وہ بچ گئے۔ بیٹے کی کمپنی سے تنخوا ہ نہ لینے پر نااہل کردیا جاتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں