مویشی منڈیوں کے قیام سے زمین داروں‌کو فائدہ ہوا:مشیر وزیر اعلیٰ

ساہیوال ( ایس این این )مشیر وزیر اعلی پنجاب ملک محمد افضل کھوکھر نے کہا ہے کہ ماڈل مویشی منڈیو ں کے قیام سے زمینداروں کو آڑہتیوں کی لوٹ کھسوٹ سے نجات ملی ہے اور انہیں اپنے جانوروں کا معقول معاوضہ وصول ہونے لگا ہے جس سے منڈیوں میں در پیش مشکلات ختم ہو گئی ہیں -پورے صوبے میں کہیں بھی غیر قانونی منڈی لگانے کی اجازت نہیں اور اس فیصلے پر سختی سے عملدر آمد کروایا جا رہا ہے -انہوں نے یہ بات کمشنر آفس میں ساہیوال کیٹل مارکیٹ کمپنی کے اجلا س سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں کمشنر علی بہادر قاضی ،ڈپٹی کمشنر شوکت علی کھچی ،ممبر صوبائی اسمبلی میاں محمدمنیر ،ایم ڈی احمد علی اور بورڈ کے ممبران نے شرکت کی -انہوں نے ساہیوال کیٹل کمپنی کی کارکردگی کو سراہا اور اسے دوسروں کے لئے رول ماڈ ل قرار دیا -انہوں نے ہدایت کی کہ کمپنی کے مالی حسابات کا آڈٹ معروف کمپنی سے کرانے کے ساتھ ساتھ اکائونٹنٹ جنرل آفس سے بھی کروایا جائے -اجلاس میں ایم ڈی احمد علی نے بتایا کہ سال 2016-17کے دوران کمپنی کو 2کروڑ47لاکھ18ہزار روپے کی آمدن ہوئی جبکہ اخراجات 2کروڑ24لاکھ روپے رہے -ملک محمد افضل کھوکھر نے ساہیوال کی مویشی منڈی کی متبادل جگہ شفٹ کرنے کی بھی ہدایت کی تا کہ ریلوے لائن کی وجہ سے ممکنہ حادثے سے بچا جا سکے -انہوں نے منڈیوں میں آنے والے زمینداروں اور بیوپاریوں کو کھرل اور چارپائی کی فراہمی کو یقینی بنانے کی ہدایت کی -ایم ڈی احمد علی نے بتایا کہ چیچہ وطنی ماڈل منڈی کا 60فیصد کام مکمل ہو چکا ہے جبکہ عارف والا ماڈل منڈی پر بھی کام شروع کر دیا گیا ہے جس کے لئے منڈی کو عارضی طور پر دوسری جگہ شفٹ کیا گیا ہے -بعد میں مشیر وزیر اعلی پنجاب نے ماڈل منڈی چیچہ وطنی میں جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیا وار اسے مزید تیز کرنے کی ہدایت کی تا کہ اسے جلد از جلد مکمل کیا جا سکے –

اپنا تبصرہ بھیجیں