ڈسکہ: کونسلر کی جانب سے زاہد حامد کے قتل پر 10 لاکھ کا انعام

سیالکوٹ: سیالکوٹ کی تحصیل ڈسکہ کے ایک کونسلر نے گزشتہ روز ڈسکہ میں نکالے گئے احتجاجی جلوس کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کو واجب القتل قرار دیتے ہوئے انھیں قتل کرنے والے کو دس لاکھ روپے کا انعام مقرر کیا ہے۔ میاں اشرف نامی کونسلر نے جو انجمن تاجران ڈسکہ کا عہدے دار بھی ہے نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انوشہ رحمٰن اور دیگر ملوث ارکان نے استعفے نہ دیا تو آج رات حکومت ختم ہو جائے گی۔ انھوں نے اسمبلی میں بیٹھے ارکان اسمبلی کو بھی آڑے ہاتھوں لیا اور مولوی حضرات جو بھی گالیوں سے نوازا۔ یاد رہے یہ علاقہ زاہد حامد کا آبائی علاقہ ہے. مزید اس ویڈیو میں دیکھیے:

اپنا تبصرہ بھیجیں