شہدائے کربلا کے چلم کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات

لاہور:‌ملک بھر میں شہدائے کربلا کا چہلم عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہےاور اس سلسلے میں مختلف شہروں سے جلوس بھی برآمد ہوئےہو رہے ہیں ۔شہدائے کربلا کے چہلم کے سلسلے میں نکالے جانے والے جلوسوں کی سیکیورٹی کے لئے انتہائی سخت اقدامات کئے گئےہیں اور مقررہ راستوں کو کنٹینرز اور خاردار تاریں لگا کر بند کیا گیا ہے۔کراچی اور پشاور میں موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی ہے جب کہ شہر قائد میں صبح 10 سے رات 10 بجے تک موبائل فون سروس بھی معطل رہی گی۔کراچی میں شہدائے کربلا کے چہلم کے سلسلے میں مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہواگا جو مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ حسینیاں ایرانیاں پر اختتام پذیر ہوگا۔ راولپنڈی میں چہلم شہدائے کربلا کا مرکزی جلوس امام بارگاہ عاشق حسین تیلی محلے سے برآمد ہوگا۔۔ادھر ملک کے مختلف شہروں میں شہدائے کربلا کے چہلم کے موقع پر موبائل فون سروس معطل کردی گئی ہے۔ جن شہروں میں موبائل سروس معطل کی گئی ان میں کوئٹہ، راولپنڈی، کراچی شامل ہیں۔ موبائل فون سروس کی بندش سے شہریوں کا مواصلاتی رابطہ منقطع ہوگیا ہےجس سے انہیں رابطوں میں پریشانی کا سامنا ہو رہا ہے۔حضرت امام حسین اوران کے جانثاروں کے چہلم کے موقع پر ملک بھر میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ مرکزی جلوسوں کے روٹس پر پولیس اہلکاروں کی بھاری نفری تعینات رہی جب کہ راستے کنٹینرزلگا کربند کئے گئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں