مقامی ثقافت کا فروغ قومی یگانگت کا اہم بڑا ذریعہ ہے:کمشنر ساہیوال

ساہیوال (بیورورپورٹ)کمشنر ساہیوال ڈویژن بابر حیا ت تارڑ نے کہا ہے کہ مقامی کلچر کا فروغ تہذیب و ثقافت کی ترویج میں بنیادی کردار ادا کرتا ہے جس کا براہ راست تعلق عوام کے رہن سہن اور معاشرتی اقدار سے ہے جس سے نہ صرف عوام میں یگانگت اور بھائی چارے کو فروغ ملتا ہے بلکہ اس سے معاشرے میں موجود منفی رویوں کو بھی ختم کرنے میں مدد ملتی ہے۔ یہ بات انہوں نے ساہیوال آرٹس کونسل کے زیر اہتمام جناح ہال میں ساہیوال لوک میلہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پرڈپٹی کمشنر شوکت علی کھچی اور یذیڈنٹ ڈائریکٹر ریاض ہمدانی بھی موجود تھے۔انہو ں نے فنکاروں کی پرفارمنس کو سراہا اور کہا کہ ساہیوال کا خطہ پنجاب کی تہذیب و تمدن کا مرکز ہے جسے مزید فروغ دینے کیلئے انتظامیہ بھر پور تعاون جاری رکھے گی۔3گھنٹے جاری رہنے والے میلے میں فنکاروں نے مزاحیہ خاکوں‘لوک گیتوں‘جھومر اور دھمال سے حاضری کو محظوظ کیا۔میلے میں شریک فنکاروں میں شازیہ ماروی اور نوید خاں نے بابا بلھے شاہ کا کلام پیش کیا جبکہ لاہور کی سٹیج فنکارہ سیرت علی نے دھمال پیش کر کے سماں باندھ دیا۔ لوک میلے میں رضوان ملک اور رفاقت ناز نے مزاحیہ خاکہ پیش کیا جسے حاضرین نے بے حد سراہا۔اس موقع پر کمالیہ سے آئے فنکار ایوب خان اور ادیب خان‘چیچہ وطنی سے اسرار طوطی اور محسن طوطی‘گوجرانوالہ کے امانت ساز اور سلامت خان جبکہ مقامی فنکاروں سکندر لوہاراور راشد منظور جھلہ نے لوک گیت پیش کئے۔لوک میلہ میں بابر جھومری گروپ نے خوبصورت جھومر ڈانس پیش کیا جبکہ لڈو ڈھولیا نے اپنی پرفارمنس سے حاضرین سے خوب داد وصول کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں