نواز شریف کی کرپشن چھپانے میں وزیر اعظم مدد گار ہیں:‌عمران خان

بہاولپور: پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران نے کہا ہے کہ جو تین سوارب روپے لے کر گیا وہ کہتا ہے مجھے کیوں نکالا، وہ چوری کی دولت کو بچانے کے لیے عدلیہ پر حملے کر ر ہا ہے۔عمران خان نے بہاولپور میں پاکستان تحریک انصاف کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے الزام لگایا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان کرپشن چھپانے میں نواز شریف کی مدد کر رہے ہیں،شریف خاندان نے غیر قانونی طور پر شوگر ملیں بنائیں، عوام وعدہ کرے کہ اگلےالیکشن میں اسےووٹ نہیں دیں گےجس کا پیسہ باہر ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ یہاں پہنچنے میں 9گھنٹے لگے،اگر 24 گھنٹے بھی لگتےتویہاں آناتھا،سپریم کورٹ نے نواز شریف کو پورا موقع دیا مگر انہوں نےجھوٹ بھی بولااور جعلی کاغذات بھی دیے،جے آئی ٹی بنی مگر اس میں بھی ثبوت کا ایک کاغذ نہیں دیا،بڑے چور یہاں سے پیسہ باہر لےجاتے ہیں اور لندن دبئی میں محلات بناتے ہیں، 300 ارب روپے جو کمائے وہ باہر کیسے گئے؟ کرپشن قوموں کو تباہ کردیتی ہے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ شوگر ملز بند ہونے سے کسانوں کو نقصان ہوا، شہباز شریف سے کہتا ہوں کہ وہ انہیں پیسہ دلوائیں، حکومت کی ذمے داری ہے کہ وہ ان غریب کسانوں کی مدد کرےجو سارا سال محنت کرتے ہیں،آج فی بندہ ایک لاکھ روپے سے زائد کا مقروض ہے، لاہور ہائیکورٹ سے کہوں گا کہ کسانوں کو گنے کے پیسے دلوائے جائیں،جب کسان خوشحال ہوتا ہےتو ملک خوشحال ہوتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اقتدارمیں آکر سب سےزیادہ پیسہ کسانوں کو دےگی، میں حکومت سے مطالبہ کر تا ہوں کہ سب سے زیادہ سہولتیں کسانوں کو دی جائیں۔
چیئرمین پی ٹی آئی کا مزید کہنا تھا کہ 27 کلومیٹرکی اورنج ٹرین پر200 ارب روپےخرچ کیے جا رہے ہیں اگر اس سے کم پیسہ کسانوں پر خرچ کر دیں توملک میں خوشحالی آجائے گی، دنیا کے کسی ملک نے غربت ختم نہیں کی سوائے چین کے، ہندوستان اپنے کسانوں کی مدد کرتا ہے، لیکن یہاں ایسا نہیں ہے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت کا پیسہ عوام کا پیسہ ہے، چار سال میں دبئی میں پاکستانیوں نے 800 ارب روپے کی پراپرٹی لی، اگر یہی 800ارب روپے پاکستان میں خرچ ہوتے تو یہیں نوکریاں مل جاتیں، چھوٹی چوریاں کرنے والے غریب لوگوں سے جیلیں بھری ہوئی ہیں ، ہمارے مزدور دبئی میں نوکریاں کرنے جاتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ قوم کے پاس اپنے بچوں کو پڑھانے کے لیے پیسے نہیں ہوتے، حکومت کمزور طبقے کی مدد تب کرتی ہے جب اس کے پاس پیسہ آتا ہے اور جو پیسۃ عوام پر خرچ ہونا ہوتا ہے اسے یہ لوٹ کر باہر لے جاتے ہیں۔
چیئرمین تحریک انصاف نے مزید کہا کہ ہم نے کے پی کے میں ایک ارب درخت اگائے ہیں، چھانگا مانگا جیسے 40 جنگل اگائےاور جب اللہ موقع دے گا مزید جنگلات اگائیں گے،اگرباری ملی توپورے پاکستان کو ہراکردیں گے، درخت اس لیے اگائے کہ یہ ہوا کو صاف کرتے ہیں۔
عمران خان سے قبل تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے جلسے سے خطاب کر تے ہو ئے کہا کہ اوچ شریف کا موسم خراب تھا مگر عمران خان پھربھی جلسےمیں آئےہیں ۔
انہوںنے کہا کہ عمران خان کاشکریہ اداکریں جو 9 گھنٹے میں بذریعہ سڑک سفر کرکے یہاں پہنچے ہیں ،ہم سب سے پہلے نوجوانوں کو روزگار دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں