ہائی سٹریٹ پر ٹریفک کا مسئلہ سنگین ہو گیا

سا ہیوال(بیورورپورٹ)ہائی سٹریٹ پر ٹریفک اکثر اوقات جام رہنے لگی‘ ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کیلئے غیر قانونی پارکنگ ختم کرنے کے لفٹر سکیم بھی ناکام‘ متعلقہ اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق چند ماہ قبل ہائی سٹریٹ پر بڑھتی ہوئی ٹریفک کے پیش نظرمیونسپل کارپوریشن نے لفٹر گاڑی متعارف کرائی تھی اور ہائی سٹریٹ پر کھڑی کرنے والی غیر قانونی پارکنگ اور سڑک پرکھڑی وہیکلز کولفٹر کے ذریعے اٹھا کر جرمانوں کا سلسلہ شروع کیا لیکن اس کے باوجود ہائی سٹریٹ پر اکثر ٹریفک جام کا سلسلہ جاری ہے، اکثر جگہوں پر چھوٹے چھوٹے رکشہ اسٹینڈز اور دوکانداروں کی ذاتی گاڑیاں دوکانوں کے باہر کھڑی رہتی ہیں بازاروں میں خریداری کیلئے آنیوالے حضرات بھی اپنی گاڑیاں سڑک پر کھڑی کر جاتے ہیں. جس کی وجہ سے ٹریفک اکثر جام رہتی ہے اس طرح لفٹر کے ذریعے گاڑیاں اٹھا کر ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کی سکیم بھی ناکام ہو گئی۔ میونسپل کارپوریشن کے بعض ممبران نے پچھلے اجلاس میں لفٹر گاڑی والوں پر پیسے لینے کا الزام بھی لگایااور کہاکہ اس سے کارپوریشن کی بدنامی ہو رہی ہے ٹھیکہ منسوخ کیاجائے اور پہلے پارکنگ کیلئے جگہ مختص کی جائے لیکن ابھی تک اصل معاملات پر توجہ نہیں دی گئی اور لفٹر کے ذریعے گاڑیاں اٹھانے کا سلسلہ جاری ہے۔ شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ہائی سٹریٹ پر ناجائز چھوٹے چھوٹے رکشہ اسٹینڈز اور دوکانوں کے باہر سڑک پر کھڑی کرنے والی گاڑیوں کے مالکان کے خلاف کارروائی کرکے اصل معاملات پر توجہ دی جائے اور لفٹر گاڑی والوں پر پیسے لگنے والے الزام کا سدباب کیاجائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں