ٹیکس کی بروقت ادائیگی ملکی خسارہ کم کر سکتی ہے: ڈاکٹر خلیل احمد

سا ہیوال(بیورورپورٹ)چیف کمشنر ان لینڈ ریو نیو آر ٹی او ساہیوال ڈاکٹر خلیل احمد زاہد نے انکشاف کیا ہے کہ حکومت کی آمدن ٹیکسوں سے کم ہے اور اخراجات بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے 1500ارب روپے کے خسارہ میں ہونے کی وجہ سے وفاقی حکومت کو اندرونی وبیرونی قرضوں کا سہارا لینا پڑرہا ہے۔ پاکستانی تاجروں‘ صنعتکاروں پر حکومت کو ٹیکس لگا کر خسارے کو پورے کرنیکی کوشش کی جاتی ہے اگر ٹیکسوں کی ادائیگی دیانتداری سے ہو تو ملکی خسارے میں بڑی حد تک کمی آسکتی ہے اس لیے ہمیں بحیثیت قوم اپنی ذمہ داریوں کو پورا کرنا ہے۔ساہیوال کلب میں ایک عشائیہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ساہیوال آر ٹی او کے چار اضلا ع ساہیوال‘ اوکاڑہ‘ پاکپتن اور وہاڑی کو 15ارب روپے کا ٹارگٹ دیا گیا ہے جسے جلد پورا کر لیا جائیگا اس سلسلہ میں چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ساہیوال اور اوکاڑہ کو اہم رول ادا کرنا ہے اس لیے انکم ٹیکس ان لینڈ ریو نیو کے افسروں‘ تاجروں اورصنعتکاروں کاایک دوسرے سے چولی دامن کا ساتھ ہونا چاہیے تاکہ ملکر ملکی ترقی میں اپنا تاریخی کردار ادا کر سکیں۔ اس موقعہ پر تاجروں وصنعتکاروں نے انہیں ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں