عوام کو صحت کی جدید سہولیات فراہم کے لیے کوشاں ہیں: کمشنر ساہیوال

سا ہیوال(بیورورپورٹ)کمشنر ساہیوال ڈویژن بابر حیات تارڑ نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت ساہیوال ڈویژن کے لاکھوں شہریوں کو صحت کی جدید سہولیات فراہم کرنے کیلئے ٹیچنگ ہسپتال کی توسیع کے بڑے منصوبے پر کام کر رہی ہے جس پر 2ارب 54کروڑ روپے سے زائد لاگت آئیگی۔منصوبے کی تکمیل سے نہ صرف موجودہ عمارت میں جدید طبی سہولیات میسر آئیں گی بلکہ نئے بلاک کی تعمیر سے 458بستروں کامزید اضافہ ہو گا۔مسلسل مانیٹرنگ اور ڈاکٹروں کے تعاون سے ہسپتال میں سروسز کی فراہمی بہت بہتر ہوئی ہے جس میں مریضوں کو مفت ادویات کی فراہمی‘سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی دستیابی اور طبعی معائنے کیلئے جدید مشینوں کی سہولت بھی شامل ہے۔انہوں نے یہ بات ہسپتال کے دورے کے دوران جاری ترقیاتی کام کا جائزہ لینے کیلئے ہونے والے اجلاس میں کہی جس میں پرنسپل ڈاکٹر ظفر حسین تنویر‘ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر صادق سلیم‘ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ حبیب جیلانی وینس اور ایم ایس ڈاکٹر زبیر طارق نے بھی شرکت کی۔کمشنر نے ہسپتال کی مجموعی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا لیکن بیڈ شیٹس کی صفائی پر خاص توجہ دینے کی ہدایت کی۔انہوں نے مریضوں کے لواحقین کے سہولت کیلئے مزید انتظار گاہیں تعمیر کرنے کی ہدایت کی تاکہ لواحقین کھلی جگہوں پر نہ بیٹھیں۔ زیر تعمیر ہسپتال کا دورہ کرتے ہوئے کمشنر بابر حیات تارڑ نے کام کی سست رفتار پر ناراضگی کا اظہار کیا اور محکمہ بلڈنگ کو ہدایت کی کہ انہیں ہفتہ وار رپورٹ پیش کی جائے تا کہ ہسپتال کی جلد تکمیل کو یقینی بنایا جا سکے۔ایس ای بلڈنگ ساجد رشید نے بتایا کہ نئے بلاک کی تعمیر 96فیصد مکمل ہو چکی ہے اور اسے 30جنوری تک مکمل کر لیا جائے گا۔انہو ں نے کہا کہ 23کروڑ روپے کی لاگت سے موجودہ عمارت کی مرمت کا کام مکمل ہو چکا ہے جبکہ 58کروڑ 57لاکھ روپے سے نئی عمارت کی تعمیر جاری ہے۔کمشنر نے ہسپتال کی لیبارٹریوں میں بنیادی میڈیکل ٹیسٹ کے علاوہ دوسرے ٹیسٹ شروع کرنے کی بھی ہدایت کی تا کہ عوام کو نجی لیبارٹریوں سے رجوع نہ کرنا پڑے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں