ساہیوال: لیڈی ہیلتھ ورکز کا ڈیٹا آئن لائن کرنے میں مبینہ کرپشن کا انکشاف

ساہیوال(نمائدہ خصوصی) لیڈی ہیلتھ ورکرز کا ریکارڈ آن لائن کرانے میں مبینہ کرپشن کے خلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التوا جمع،شہریوں کا اسمبلی میں آواز اٹھا نے پر ایم پی اے کو خراج تحسین ۔تفصیلات کے مطابق لیڈی ہیلتھ ورکرز کا ریکارڈ آن لائن کرانے میں مبینہ کرپشن کے خلاف تحریک التوا تحریک انصاف کی ممبر صوبائی اسمبلی نبیلہ حاکم کی جانب سے جمع کرائی گئی کلرک ارشد نے افسران کے نام پر رشوت وصول کی سروس بک کی تکمیل کے لیے خواتین کو رات گئے تک آفس میں روکے رکھا جان بوجھ کر کلرک نے ریکارڈ میں غلطیاں کیں تاکہ وہ ملازمین سے مبینہ طور پر رشوت وصول کر سکے ارشد ٹوکے نے ملازمین پر رشوت کا ٹوکہ چلا دیاسروس بک کی تکمیل کے لیے ملازمین۔سے 25 سو روپے رشوت وصول کی گئی ارشد ٹوکے کے اس اقدام سے ملازمین میں سخت پریشانی پائی جاتی ہے ۔اور اس مبینہ کر پشن میں سی ای او ہیلتھ مشتاق سپرا، کوآرڈینیٹر آئی آر ایم این سی ایچ نعیم عطاء کی بھی مبینہ ملوث ہو نے کی باز گشت سنائی دے رہی ہیں کیونکہ انہوں نے نان ٹرانسفر ایبل پوسٹ سے متعلقہ ملازم کو جبری طور پر سیٹ سے ہٹا کر غیر قا نونی طور پر محمد ارشد کو اس سیٹ پر بیٹھا دیا شہری و سماجی حلقوں نے صوبائی اسمبلی میں آواز اٹھا نے پر ممبر صو بائی اسمبلی نبیلہ حاکم کو خراج تحسین پیش کیا اور اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ کر پشن میں ملوث افسران و ملازمین کا کڑا احتساب کیا جا ئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں