نیب کو کرپٹ کہنے والوں کو پہلے کرپشن کیوں نہ یاد آئی: سربراہ نیب

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس (ریٹائرڈ) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کو کرپٹ کہنے والوں کو کرپشن پہلے کیوں نظر نہ آئی آج ہی کیوں وہ نیب میں کیڑے نکال رہے ہیں۔جب اقتدار تھا اس وقت ایسا کیوں نظر نہیں آیا؟ میں یہ عزم لے کر آیا ہوں کہ نیب کو ٹھیک کروں گا تمام فیصلے خود میرٹ پر کروں گا، اب جہاں کرپشن کا سرا نظر آئے گا وہاں نیب ضرور پہنچے گا۔
وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے گزشتہ روز کے بیان پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے گزشتہ روز کہا کہ نیب ایک کرپٹ ادارہ ہے نیب کو کرپٹ ادارہ کہنے والوں کو اب کرپشن نظر آئی ہے،جب میں نے چارج سنبھالا ہے تو نیب کو کرپٹ کہنے کا مطلب میری اور میرے ادارے کی ساکھ پر انگلی اٹھا نے کے مترادف ہے۔چیئرمین نیب نے کہا کہ سپریم کورٹ کے احکامات آئین کے تحت تمام اداروں پر لاگو ہوتے ہیں، ریفرنسز میں انصاف کے تقاضے پورے کریں گے تمام ریفرنسز کی خود نگرانی کروں گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں