مخالفین کے ایماء پر انصاف کا خون کیا گیا: نواز شریف

لندن: سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ جس پر الزام ہو اس کی غیرموجودگی میں فرد جرم عائد کرنے کی کوئی مثال نہیں ملتی۔ لندن میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئےان کا کہنا تھاکہ یہ انصاف ہورہا ہے یا انصاف کا خون ہورہا ہے،مجھے اللہ سےامید ہے میرے ساتھ انصاف کیا جائے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے مخالفین کو جے آئی ٹی میں شامل کیا گیا، جے آئی ٹی نے ایڑی چوٹی کا زور لگا دیا،پاکستان جا کر مقدمات کا سامنا کروں گا۔میاں نواز شریف کہتے ہیں کہ کچھ نہیں ملا تو اقامے میں فیصلہ دیا گیا، اقامہ تو ہر تیسرے پاکستانی کے پاس ہے،فیصلہ پاناما پرکرتے اقامہ پر کیوں فیصلہ کیا؟
انہوں نے یہ بھی کہا کہ فیصلہ کرنا تھا تو کک بیک یا کمیشن پر کرتے میں شرمسار ہوکر گھر چلا جاتا۔نواز شریف نے مزید کہا کہ میرے خلاف من پسند جے آئی ٹی بنائی گئی اور اس میں مخالفین کو ڈال کر خود ہی فیصلہ کیا گیا۔نواز شریف نے کہا کہ مجھے کرپشن یا کک بیک پر نہیں نکالا گیا بلکہ پاناما کا فیصلہ اقامہ پر آکر ختم ہوا۔ انہوں نے کہا کہ 26 اکتوبر سے پہلے وطن واپسی ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں