ٹیکنالوجی کالج میں طلبا گروہوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ

ساہیوال( نمائندہ خصوصی) گورنمنٹ کالج آف ٹیکنالوجی ساہیوال میں طلبا کے دو گروہوں کے مابین فائرنگ سے 3 طالب علم زخمی ہوگئے۔10 طلبا ء کے خلاف ایف آئی آر درج، گرفتاری کے لیے پولیس کے چھاپے۔ کالج کے ہاسٹلز میں موجود اسلحہ برآمد کیا جائے، شہریوں کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ کالج آف ٹیکنالوجی میں سربراہی کے معاملے پر سیف الملوک اور غلام محی الدین نامی گروہوں کے درمیان کافی عرصہ سے تناؤ پایا جاتا تھا گزشتہ روز دونوں گروہوں کے مابین فائرنگ کا تبادلہ ہو جس سے 3 طلبا سیف الملوک،حسن اور غلام محی الدین شدید زخمی ہو گئے۔پولیس نے ساغر، محسن سگھلہ، اسد، ایاز، حسن،عمیر حسن نثار اور دیگر کے خلاف مقدمات درج کر لیے ہیں تا ہم ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔ٹیکنالوجی کالج کے اردگرد موجود شہریوں کے مطابق طلبا سر عام اسلحہ کی نمائش کرتے پھرتے ہیں۔ رات کے وقت کالج کے گرد و نواح میں ہوائی فائرنگ ہوتی رہتی ہے اگر پولیس ہاسٹلز کی تلاشی لے تو کثیر تعداد میں اسلحہ برآمد ہو سکتا ہے۔ شہریوں کے مطابق اگر اس معاملے کو حساس نہ سمجھا گیا تو مستقبل قریب میں بڑی پڑائی ہونے کا خدشہ ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں