گورنمنٹ ہائی سکول ساہیوال کے طلبا صاف پانی سے محروم

ساہیوال( بیورورپورٹ)گورنمنٹ ہائی سکول کے طلباء صاف پانی سے محروم ‘ مسجد کی ٹونٹیوں کا پانی پینے سے طلباء بیمار ہونے لگے‘ نان سیلری بجٹ کی بھاری رقوم جاری ہونے کے باوجود سکول میں سہولیات کا فقدان، والدین کا کمشنر ‘ڈی سی او اور ای ڈی او ایجوکیشن سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ ہائی سکول کے تقریباً3700بچوں کیلئے سکول میں ٹھنڈے پینے کے پانی کے 4الیکٹرک کولر نصب کئے گئے جو عرصہ دراز سے خراب ہیں جس کی عدم دلچسپی کے باعث سکول کے بچے سکول کی مسجد میں نصب وضو کی ٹونٹیوں سے پانی پینے پر مجبور ہیں۔ والدین کا کہناہے کہ بچے مسجدکی ٹونٹیوں سے آلودہ پانی پی کر پیٹ ودیگر مختلف بیماریوں کا شکار ہور ہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ سکول میں بچوں کو ٹھنڈے صاف پانی سے محرو م رکھنا سکول انتظامیہ اور محکمہ تعلیم کی کارکردگی اور پڑھو پنجاب بڑھو پنجاب کے دعوؤں پر سوالیہ نشان ہے۔ انہوں نے کمشنر ‘ڈپٹی کمشنر اور ای ڈی او ایجوکیشن سے سکول میں نصب الیکٹرک کولر کو فوری درست اور سکول میں ٹھنڈے صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کامطالبہ کیاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں