سیلفی لینےپر پی ٹی آئی کی خاتون رکن کا فون ضبط

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ میں پاکستان تحریک انصاف انسداد (پی ٹی آئی) کے رکن عظمیٰ کاردارکا موبائل فون ضبط کر لیا، جہاں وزیر خارجہ خواجہ آصف کے خلاف درخواست کی سماعت جاری تھی.تفصیلات کے مطابق جسٹس محسن اختر کیانی نے پی ٹی آئی کے رہنما نعیم الحق کے ساتھ سیلفی بنانے کے بعد عظمیٰ کاردار کا فون ضبط کرلیا.
بعد ازاں معزز جج نے یک صفحاتی معافی نامہ لکھنے کے بعد ان کا فون واپس کردیا. عدالتی عملے نے ان کی 9 سیلفیاں ضائع کر دیں اور انھیں مستقبل میں محتاط رہنے کی تنبیہ کی. عظمیٰ کاردار اس سے قبل جنوری میں سپریم کورٹ میں داخلے پر سپریم کورٹ اہل کاروں سے جھگڑے کی وجہ سے میڈیا کی نظروں میں آئی تھیں جب انھوں نے سپریم کورٹ کا شیشہ بھی توڑا تھا. نعیم الحق جو ایک متنازعہ ٹویٹ کی وجہ سے تنقید کی زد میں آئے تھے اس وقت عظمیٰ کی جانب سے معذرت کی تھی ، آج عدالت میں ایک بار پھر انھیں خفت کا سامنا کرنا پڑا.

اپنا تبصرہ بھیجیں