این اے 120: نتائج رکوانے کے لیے پیٹیشن دائر

لاہور: تحریک انصاف کی رہنما اور این اے 120 میں دوسرے نمبر پر آنے والی امیدوار برائے قومی اسمبلی ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ غیر تصدیق شدہ 29ہزار ووٹوں کی تصدیق تک نتائج جاری نہیں ہونے دینگے، یہ بات آج انھوں نے نتائج رکوانے کے خلاف الیکشن کمیشن میں پٹیشن دائر کرتے ہوئے کہی.صحافیوں سے گفتگو میں ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ الیکشن جیتوں یا ہاروں 29ہزار ووٹوں کی تصدیق نہیں ہوئی۔ الیکشن کمیشن کے خلاف عدالت جاوں گی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ضابطہ اخلاق کے مطابق ہمیں پہلےالیکشن کمیشن سے ہی رجوع کرنا ہے،حلقے میں ایک ارب کے ترقیاتی کام کروائے گئے جو کہ انتخابات سے قبل دھاندلی تھی۔غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق این اے 120 میں الیکشن ہارنے ہونے والی ڈاکٹریاسمین راشد نے کہا کہ ضمنی انتخابات میں حصہ مشکل کام تھا ،29ہزارغیرتصدیق شدہ ووٹوں کے بغیر الیکشن لڑایا گیا،حلقے میں لوگوں کو نوکریاں دی گئیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ن لیگ نے لوگوں کی غربت کافائدہ اٹھایا ہے،حکومتی وزرا نےجس طرح فنڈز تقسیم کیے اس کی مثال نہیں ملتی،الیکشن میں زکواۃ کمیٹیوں کو بھی استعمال کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں