شاہد خاقان عباسی نے چشمہ نیو کلیئر پاور پلانٹ کا افتتاح کر دیا

میانوالی (نیٹ نیوز )وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ بجلی کے مختلف منصوبوں سے اگلے سال تک مجموعی طور پر مزید10ہزار میگا واٹ بجلی حاصل کی جائے گی ،چینی کمپنیوں کو دعوت دیتا ہوں کہ پاکستان میں نیو کلیئر پاور پلانٹ لگائیں ۔میانوالی میںوزیر اعظم نے340میگا واٹ کے نیو کلیئر پاور پلانٹ چشمہ سی فور کا افتتاح کیا ،اس موقع پر میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 28دسمبر 2016کے آٹھ ماہ بعد پانچواں جوہری پاور پلانٹ چشمہ سی4بھی مکمل ہو گیا ہے ،اس بات کی خوشی ہے جب چشمہ یونٹ ون کی تعمیر کا وعدہ ہوا تھا ،اس وقت نواز شریف کی حکوممت تھی ،اس وعدے سے پاکستان اور چین کے مابین نیو کلیئر تعاون کی بنیاد پڑی ۔انہوں نے کہا کہ جاری بجلی کے متعدد منصوبوں کے علاوہ مظفر گڑھ کے مقام پر مزید نیو کلیئر پاور پلانٹ کا منصوبہ بھی بنا یا گیا ہے جو کہ 2030تک 8سو میگا واٹ کے ہدف کے اصول کی طرف اہم قدم ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ یقین دلانا چاہتا ہوں کہ نواز شریف کے عزم کوپورا کیا جائے گا اور حکومت پاکستان اٹامک انرجی کے ساتھ اہداف حاصل کرنے کے لیے بھر پور مدد کرے گی۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ اس میں کوئی شبہ نہیں کہ حکومت اور عوام کی مدد کے بغیر منصوبے پایہ تکمیل تک نہ پہنچ پاتے ،چینی تنظیموں کا بھی شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں ،جنہوں نے جدید نیو کلیئر پاور پلانٹ کے لیے تکنیکی اور مالی مدد فراہم کی ۔ انہوں نے کہا کہ چینی کمپنیوں کو پاکستان میں مزید نیو کلیئر پاورپلانٹ لگانے کی دعوت دیتا ہوں اور دیگر شعبوں میں بھی چینی تعاون ہمارے لیے قابل فخر ہو گا ۔ان کا کہنا تھا کہ پی اے سی نے زراعت کے شعبے میں بھی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے جس کے باعث ملک میں کپاس کی پیدا وار کے اضافے سے قیمتی زر مبادلہ حاصل ہوا ،صحت عامہ کے شعبوں میں بھی پاکستان اٹامک انرجی کمیشن نے قابل قدر خدمات سرانجام دیں ،ملک بھر میں 18کینسر کے ہسپتال قائم ہیں جہاں 80فیصد مریضوں کا علاج کیا جاتا ہے ۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ پاکستان نے چین کے ساتھ سی پیک کے تحت بڑے منصوبے شروع کیے ہیں جن کے ثمرات عوام تک پہنچنا شروع ہو گئے ہیں ،گوادر پورٹ بھی تکمیل کے مراحل میں ہے ،اس سال شرح ترقی پانچ فیصد سے بڑھ کر چھ فیصد تک پہنچ جائے گی .

اپنا تبصرہ بھیجیں