ساہیوال، کمشنر کی زیر صدارت ڈی پی ایس کے بورڈ آف ٹرسٹیز کی میٹنگ

ساہیوال(ایس این این)ڈویژنل پبلک سکول ساہیوال کے بورڈ آف ٹرسٹیز نے 17کروڑ20لاکھ روپے کے ترقیاتی اور 74کروڑ 72لاکھ روپے کے غیر ترقیاتی اخراجات کی منظوری دے دی ہے جس میں 4کروڑ روپے سے راوی کیمپس میں گرلز سیکشن کی تعمیر بھی شروع کی جائے گی جس پر لاگت کا کل تخمینہ 14کروڑ روپے لگایا گیا ہے۔ یہ منظوری ساہیوال ایجوکیشنل ٹرسٹ کے بورڈ آف ٹرسٹیز کے 85ویں اجلاس میں دی گئی جو کمشنر ساہیوال/چیئرپرسن ٹرسٹ سلوت سعید کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں ایک کروڑ روپے سے راوی کیمپس کے زیر تعمیر بوائز سیکشن کیلئے فرنیچر کی خریداری اور ایک کروڑ روپے سے موجودہ سکول کے پری سیکشن کو ایئرکنڈیشنڈ بھی کیا جائے گا۔ بورڈ آف ٹرسٹیز کے اجلاس میں پرنسپل برگیڈیر (ر) انوار الحسن کرمانی، ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ احمد خاور شہزاد، پروجیکٹ ڈائریکٹر حبیب جیلانی وینس، پروفیسر قمرالزمان خان، شیخ محمد یونس، سید افتخار حسین شاہ، اے ڈی سی فنانس یاسر فرید اور برسر کاشف ستار نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں ساہیوال اور چیچہ وطنی کیمپسز کے ملازمین کی تنخواہوں کیلئے نئے پے سکیل 2022نافذ کرنے اور 15 فی صد ایڈہاک الاؤنس دینے کی بھی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں راوی کیمپس میں زیر تعمیر بوائز سیکشن میں اگلے تعلیمی سال سے کلاسز شروع کرنے کیلئے 5کروڑ33لاکھ روپے کی لاگت سے اضافی کاموں کی تعمیر کی بھی منظوری دی گئی جس میں فرنٹ باونڈری وال کی تعمیر، پارکنگ ایریا کی ڈویلپمنٹ، سٹاف کوارٹرز، سٹور رومز اور واٹرفلٹریشن پلانٹ کی تنصیب شامل ہے۔ کمشنر سلوت سعید نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سکول کے تعلیمی معیار کو سراہا اور ہدایت کی کہ طلباء و طالبات کو ہم نصابی سرگرمیوں میں ضرور شریک کیا جائے تاکہ ان کی متوازن شخصیت سازی ممکن ہو سکے۔ اجلاس میں دونوں سکولوں میں کام کرنے والے کنٹریکٹ ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فی صد اضافے کے ساتھ کنٹریکٹ میں ایک سال کی توسیع کی بھی منظوری دی گئی۔ بورڈ نے طویل مباحثے کے بعد سکول کے بڑھتے ہوئے اخراجات پورے کرنے کیلئے فیسوں میں 8فی صد اضافہ کرنے کی بھی منظوری دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں