محرم الحرام میں اتحاد بین المسلمین کو فروغ دیا جائے: شیخ اعجاز

ساہیوال(بیورورپورٹ)اتحاد بین المسلمین امن کمیٹی کے مرکزی راہنما شیخ اعجاز احمد رضا نے کہاہے کہ امن کو سیاست کی نذر نہیں کیا ‘محرم الحرام میں انتظامیہ غیر جانبداری سے مسالک کو اہمیت دے اور مسائل حل کرے ۔ شیعہ سنی علماء اتحاد بین المسلمین کی فضا برقرار رکھیں گے اور کسی سے ڈکٹیشن نہیں لیں گے ۔ نیشنل ایکشن پلان ‘ آپریشن ردالفساد ‘کومبنگ آپریشن اور مدرسہ ریفارمز کیلئے ہرمقام پر سکیورٹی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے تمام مکاتب فکر نے تعاون کیا ہے ۔شرپسندوں ‘تفرقہ بازوں پر کڑی نظر رکھیں گے ۔ متنازعہ تقریروں ‘کیسٹس ‘وال چاکنگ کا مکمل بائیکاٹ ہو گا عوام اب نفرت کی بات سننے کیلئے تیار نہیں ہیں ۔ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ لائسنسی ‘قدیمی ‘روائتی جلوس اور مجالس کے آگے کوئی بھی رکاوٹ برداشت نہ کی جائے اورنئے روٹ کی اجازت نہ دی جائے ۔ ناموس رسالت ؐ ‘ ناموس اہل بیت ‘ناموس صحابہ ؓ اور بزرگوں کے احترام اور تقدس کو بحال رکھاجائے گا ۔انہوںنے کہاکہ اپنے مسلک کو نہ چھوڑو اور دوسرے مسلک کو نہ چھیڑو کی پالیسی پر گامزن ہونا پڑے گا ۔ کافر کے نعرے لگانا اور تبرا کرنے والے اسلام ‘پاکستان اور عوام کے دشمن ہیں اور شیعہ سنی میں اختلاف دشمن کی سازش ہے ۔اداروں کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا ۔انہوںنے کہاکہ دہشتگردی ‘تخریب کاری اوربم دھماکوں سے ہمیں چوکس رہنا ہو گا ۔ تھانہ کی سطح سے محلہ ‘گائوں اور صوبوں ملک کے گلی کوچوں میں ایسے حالات بنانا ہونگے کہ دشمن شرپسندی نہ کر سکے ۔سکیورٹی کو ہائی الرٹ رکھاجائے ۔ متنازعہ معاملات کو قبل از وقت حل کیاجائے ۔18ذوالحج جشن قدیر اور حضرت عثمان غنی ؓ کی شہادت اور یکم محرم کو حضرت عمر ؓ کی شہادت پر خصوصی انتظامات کئے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں