ساہیوال، 4 کروڑ سے زائد کا غبن ،بلدیہ کے دو افسر گرفتار

ساہیوال(ایس این این) میٹرو پولٹین کارپوریشن ساہیوال بلڈنگ برانچ میں چار کروڑ35لاکھ روپے غبن کے مقدمہ میں انٹی کر پشن ساہیوال سر کل نے چھا پہ مار کر دو آفیسر گرفتارکرلئے۔تفصیلات کے مطابق 29جون2019کو ولایت شاہ سٹریٹ کے ایک شہری اختر رسول نے ڈائریکٹر جنرل انٹی کر پشن پنجاب کو اطلاع دی کہ کارپوریشن کی بلڈنگ برانچ نے دس کنال کی شادی مارکی کی کمرشلائزیشن فیس چار کروڑ35لاکھ روپے کا غبن کر کے اختیارات کا ناجائز استعمال کر تے ہوئے زیر تعمیر مارکی کی معمولی فیس لیکر این او سی جاری کر دیا ہے اور بلڈنگ برانچ میں روزانہ کی بنیاد پر سرکاری خزانہ کو پانچ لاکھ روپے سے زائد کا نقصان کیا جارہا ہے اور بلڈنگ کے آفیسر جائیدادیں بنانے میں مصروف ہیں جس پر انٹی کر پشن ساہیوال نے انکوائری کے بعد آغا ہمایوں چیف آفیسر، محمد رفیق سپر ٹنڈنٹ، آصف جا ویدبلڈنگ انسپکٹر، محمد اشرف مالک اور پارٹنر رانا محمد اکرام کے خلاف مقدمہ 420,166 ت پ اور5.2/47پی سی اے درج کر لیا اور انکوائری میں سپر ٹنڈنٹ جہانگیر انجم،انسپکٹرقسور ریاض اور ریکارڈ کیپر کے کردار کا تعین انکوائری میں طے کر نا پایا گیا ۔
دوران انکوائری چیف آفیسر ہمایوں، محمد رفیق سپر ٹنڈنٹ ،جہانگیر انجم سپر ٹنڈنٹ دو انسپکٹر آصف جا وید،قسور ریاض اور ریکارڈ کیپر اقبال احمدغبن کے مر تکب پائے گئے اور انہیں ملزم قرار دے دیا گیا اور عدالت نے ملزموں کی گرفتاری کے لئے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ۔جس پر انٹی کر پشن سر کل آفیسر خواجہ عابد صغیر نے چھاپے مار کر دو آفیسروں کو گرفتار کر لیا جبکہ دیگر ملزم فرار ہو گئے اور ملزموں نے بلڈنگ برانچ کے دفاتر کو بند کر دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں