سوشل سیکیورٹی ساہیوال میں غبن، 5 افراد کے خلاف مقدمہ

ساہیوال(ایس این این) انٹی کر پشن ساہیوال سر کل نے 75لاکھ روپے جعلی اکائونٹ کے ذریعے خرد برد کر نے کے الزام میں ڈپٹی ڈائریکٹر محمد سعید،آڈٹ آفیسر ذو الفقار علی اور کلرک باسط نسیم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ۔ریجنل ڈائریکٹر،اسسٹنٹ دائریکٹر سمیت پانچ آفیسروں کو معطل کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب ایمپلائز سوشل سیکیورٹی انسٹیٹیوٹ ساہیوال آفس میں ایک ٹیم نے چھاپہ مارا اور ایک جعلی اکائونٹ این آر ایس پی کا پایا جو کہ کلرک باسط نسیم نے پی ای ایس ایس ای کے آفیسروں کے دستخطوں سے کھولا گیا دوران تفتیش جعلی اکائونٹ کے ذریعے سر کاری خزانہ کو 75لاکھ روپے کا غبن پایا گیا کیونکہ اس اکائونٹ میں صنعتی اداروں کے ملازمین کے لئے صنعتی اداروں سے رقوم کی وصولی کے بعد سر کار کے اصل اکائونٹ کی بجائے اس اکائونٹ میں جمع کروا کر 2016سے رقم کا غبن کیا جارہا تھا اور سوشل سیکیورٹی ہسپتال اور صنعتی ملازمین کو اس کا فائدہ نہیں ہو رہا تھا۔جس پر ڈپٹی ڈائریکٹر فنانس اینڈ آڈٹ سوشل سیکورٹی ساہیوال محمد سعید،آڈٹ آفیسر ذو الفقار علی،کلرک باسط نسیم کو غبن کا ذمہ دار قرار دیا گیا اور ریجنل ڈائریکٹر علی احمد ،اسسٹنٹ ڈائریکٹر شمائلہ انجم ،محمد طفیل،ابوبکر،سعید احمد ڈپٹی ڈائریکٹر،آڈٹ آفیسر ذو الفقار علی کو معطل کر دیا اور ذمہ داروں کے خلاف سعید احمد اسسٹنٹ ڈائریکٹر انٹی کرپشن ساہیوال کی مد عیت میں 409ت پ اور5.2/47پی سی اے مقدمہ درج کر لیا ہے۔تاہم ابھی تک کوئی گرفتار عمل میں نہیں آئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں