ساہیوال، ٹیوشن سنٹراتوار کو بھی چلتے رہے، لاک ڈاؤن ٹھس

ساہیوال(سٹی رپورٹر)ساہیوال میں کورونا وائرس کے باعث تعلیمی اداروں کی بندش کے سرکاری احکامات کے باوجود اکیڈ میوں کے نام پر نجی تعلیمی ادارے چلائے جانے کا انکشاف ہواہے ،بچوں کو ٹیوشن کے نام پر اکیڈ می میں بلا کر بھاری فیسیں بٹورنے کے ساتھ ساتھ کورونا کے ایس او پیزکی بھی کھلی خلاف ورزی جاری ہے جس سے کورونا کیسز کی تعداد میں اضافہ کے خدشات پیدا ہوگئے ہیں۔ وزارت تعلیم نے کل اور آج کالجز اور سکولزکی بندش کے احکامات جاری کیے تھے تاہم نجی اکیڈمیز نے آج اتوار کو بھی اپنے طلبا کو اکیڈمیز میں بلائے رکھا اور لاک ڈاؤن کے دوران انڈر گراؤنڈ گروپس میں آنے کا ٹائم ٹیبل دے دیا ہے. ضلعی انتظامیہ نے بھی اکیڈ میز پر پابندی عائد کی تھی تاہم ذرائع کے مطابق اکیڈمی مالکان نے مذکورہ احکامات کو ہوا میں اڑاتے ہوئے ان اکیڈ میز کو تعلیمی اداروں کا درجہ دیتے ہوئے بچوں کے دا خلے شروع کرد ئیے ہیں ۔ مختلف علاقوں میں انتظامیہ سے چوری چھپے یا مبینہ ملی بھگت سے یہ کام دھڑلے سے جاری ہے جس سے شہر میں لاک ڈاؤن کے نتائج حاصل ہونا ممکن نہیں رہاہے ۔ والدین اور تعلیمی حلقوں نے حکومت سے نوٹس لینے کی درخواست کی ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں