کشمنر کی ساہیوال شہر کا ماسٹر پلان تیار کرنے کی ہدایت

ساہیوال(نمائندہ خصوصی)کمشنر ساہیوال ڈویژن نادر چٹھہ کی میٹروپولٹین کارپوریشن کو شہر کا ماسٹر پلان تیار کرنے کی ہدایت،اگلے 40 سال کی ضروریات اور آبادی کے پھیلاؤ کو مدنظر رکھا جائے،بہتر پلاننگ سے ہی عوام کو شہری سہولیات کی فراہمی ممکن ہے۔تفصیلات کے مطابق کمشنر نادر چٹھہ نے ساہیوال شہر کیلئے ماسٹر پلان تیار کرنے کی ہدایت کی ہے اور میٹروپولٹین کارپوریشن کے افسران کو کہا ہے کہ شہرکی آئندہ 40 سال تک کی ضروریات کو مدنظر رکھا جائے۔ساہیوال شہر تیزی سے شمال اور جنوب کی سمت پھیل رہا ہے جس کیلئے ابھی منصوبہ بندی کی ضرورت ہو گی۔انہوں نے یہ بات کیمپ آفس میں شہر میں جاری میگا ڈیویلپمنٹ پراجیکٹ کے ہفتہ وار جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی جس میں سیوریج اور واٹر سپلائی کے جاری کام کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں چیف میٹروپولٹین آفیسر فرمائش علی چوہدری،ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ اظہر دیوان،ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل عابد عنایت شیخ اور نیسپاک کے نمائندوں کے علاوہ متعلقہ ٹھیکیداروں نے بھی شرکت کی۔کمشنر نادر چٹھہ نے میٹروپولٹین کارپوریشن کے عملے کی مناسب تربیت شروع کرنے کی بھی ہدایت کی تاکہ اس میگا پراجیکٹ کے مکمل ہونے کے بعد میٹروپولٹین کارپوریشن کا عملہ اسے بہتر طور پر چلا سکے۔انہوں نے شہر کو مختلف زونز میں تقسیم کرکے زونل انچارج مقرر کرنے کی بھی ہدایت کی تاکہ عوام کو شہری سہولیات کی فراہمی میں شکایات کو بہتر انداز سے حل کیا جا سکے۔اجلاس میں بتایا گیا کہ شہر کے شمالی حصے کیلئے 2 ارب 12 کروڑ 83 لاکھ روپے سے سیوریج لائنیں بچھانے کا کام شروع ہو چکا ہے جس دوران 12 سے 15 انچ قطر کے 10.64 کلومیٹر اور 18 سے 72 انچ قطر کے41.63 کلومیٹر پائپ بچھائے جائیں گے جو سیوریج کو محمد پور کے قریب ڈسپوزل سٹیشن تک پہنچائیں گے۔منصوبے کے تحت شہر میں موجود تمام موجودہ ڈسپوزل سٹیشنز ختم ہو جائیں گے۔اسی طرح شہر میں موجود پینے کے پانی کی لائنیں تبدیل کر نے کے منصوبے پر بھی کام کا آغاز ہو چکا ہے جس پر لاگت کا تخمینہ 2 ارب5 کروڑ 88 لاکھ روپے لگایا گیا ہے جس کے تحت موجودہ لائنوں کو تبدیل کرکے گھر گھر کنکشن دینے کیلئے پائپ لائنیں بچھائی جا رہی ہیں جس کے پہلے مرحلے میں طارق بن زیاد کالونی اور فتح شیر کالونی میں کام کا آغاز ہو چکا ہے اس کے علاوہ پانی کی 4 ٹینکیاں مدینہ مسجد گراؤنڈ، محلہ نورپارک،غلہ منڈی اور بٹالہ سکول گراؤنڈ میں بنائی جائیں گی اور 7 کو مرمت کیا جائے گا۔اسی طرح 28 نئے ٹیوب ویل لگائے جائیں گے جبکہ 45 کو مرمت کروایا جائے گا اس کے علاوہ منصوبے کے تحت شہر میں 10 نئے واٹر فلٹریشن پلانٹ لگائے جائیں گے اور موجودہ 20 پلانٹس کی مرمت ہو گی۔اجلاس میں بتایا گیا کہ سیوریج منصوبہ ڈیڑھ سال اور واٹر سپلائی کا منصوبہ دو سال کی مدت میں بالترتیب جون2022 اور دسمبر 2022 تک مکمل کر لیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں