ساہیوال، سرکاری آشیر باد، جی ٹی روڈ پر ناجائز اڈوں کی بھرمار

ساہیوال(نیوز رپورٹر) ٹریفک پولیس ساہیوال کا دوہرا معیار، موٹرسائیکل سواروں کے معوملی غلطی پر چالان ، بس مالکان کو جی ٹی روڈ پر بس اڈے کے سامنے بیچ چوراہے میں بسیں بھرنے کی اجازت، اوور ہیڈ برج کے قریب جی ٹی روڈ پر ناجائز بس اور وین اڈوں کی بھرمار. ٹریفک پولیس کے اہل کار خاموش تماشائی بن کر رہ گئے. ذرائع کے مطابق ساہیوال میں جی ٹی روڈ پر سٹاپ کے علاوہ مسافر بٹھانا ممنوع ہونے کے باوجود بیچ چوراہے میں بسیں مسافروں سے بھری جا رہی ہیں جبکہ موٹر سائیکل سواروں کا معمولی غلطی پر چالان کر دیا جاتا ہے. جی ٹی روڈ پر تعینات پولیس اہل کار نہ صرف اپنے پیٹی بند بھائیوں کو بسوں میں مفت سوار کرواتے ہیں بلکہ بس اور وین مالکان کو مبینہ طور پر نذرانے کے عوض بسیں اور وینز بھرنے کی مکمل چھوٹ دے رکھی ہے. عوامی ذرائع کا کہنا ہے کہ نجائز اڈہ مالکان پولیس اہل کاروں کے ساتھ بیٹھ کر چائے پیتے رہتے ہیں جس سے ٹریفک کے مسائل بڑھ رہے ہیں. شہر بھر میں بھی یہی صورت حال ہے. ٹریفک پولیس اہل کار سادہ لوح دیہاتیوں کے چالان کرنے کے علاوہ صرف کچہری اور آر پی او آفس کے باہر افسران کے آنے جانے کے اوقات میں عام ٹریفک کو روکنے کا کام ہی کرتے ہیں. دوسری جانب پل پر ٹریفک کا اژدھام رہتا ہے اور شہر میں بھی ٹریفک کے مسائل جوں کے توں موجود ہیں. عوام نے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں