ساہیوال، جرائم کی شرح میں اضافہ، شہری عدم تحفظ کا شکار

ساہیوال(بیورورپورٹ)ساہیوال ڈاکوؤں وچوروں کے نرغے میں ،شہری لٹنے لگے،اغواء برائے تاوان سمیت کرائم میں خاطرخواہ اضافہ،شہری عدم تحفظ کاشکار،وارداتیں کم دکھانے کیلئے پولیس کادرخواستوں کو آن لائن کرنے کے بجائے ڈائریکٹ وصولی کاانکشاف،ڈی پی اوساہیوال محمد کاشف اسلم سے نوٹس لینے کامطالبہ۔ان دنوں ضلع ساہیوال بالخصوص شہرمیں ڈکیتی وچوری کی وارداتوں میں خاطرخواہ اضافہ ہوچکاہے شہری دن دیہاڑے لٹ رہے ہیں جبکہ پولیس معمولی جرائم میں ملوث ملزموں کو گرفتارکرکے فوٹوسیشن کے بعد ضلعی پولیس افسرکوسب اچھاہے کی رپورٹ پیش کرنے میں مصروف ہے کرائم فگر کوکم دکھانے کیلئے تھانوں میںفرنٹ ڈیسک پر درخواستوں کوآن لائن نہیں کیاجارہاہے شہریوں کو درخواستیں ایس ایچ اوزکے سامنے پیش کرنے کے بعد آن لائن کرنے کی ہدایت کی جارہی ہے،ساہیوال میڈیکل کالج کے اسسٹنٹ پروفیسرڈاکٹرساجدمصطفی کے اغواء اوران کی تاوان دیکررہائی پولیس کیلئے لمحہ فکریہ ہے ۔اس کے بعد ہڑپہ کے تاجرکابھائی اغواء ہوچکاہے جوکہ تاحال بازیاب نہ کروایاجاسکاہے،پولیس کااغواء کاروں کونہ پکڑپاناپولیس کی ناکامی سمجھاجارہاہے جس پر شہری سراپااحتجاج ہیں،کرائم کی بڑھتی ہوئی حالیہ وارداتوں سے شہری عدم تحفظ کاشکارہوچکے ہیں،عوامی سماجی حلقوں نے ڈی پی اوساہیوال محمدکاشف اسلم نے نوٹس لیکراصلاح احوال کا مطالبہ کیاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں