ساہیوال، یوٹیلٹی سٹورز کی چینی نجی دکانوں پرفروخت کا انکشاف

ساہیوال (بیورورپورٹ)یو ٹیلٹی سٹور کارپوریشن ساہیوال میں چینی کی مد میں کروڑوں روپے ہڑپ کرنے کا انکشاف یوٹیلٹی سٹور ز پر روزانہ کی بنیا د پر مہیا کی جانے والی 45ٹن چینی مختلف مقامات پرموجودکریانہ سٹور وں پر 80سے 85روپے فی کلو تک فروخت کر دی جاتی ہے جبکہ یوٹیلٹی سٹورز پر چینی دستیاب نہیں ضلع ساہیوال میں کل 47یو ٹیلٹی سٹور میں جن کے لیے گورنمنٹ کارپوریشن کو 45 ٹن چینی روزانہ کی بنیاد پر مہیا کر تی ہے۔ اس طرح ہر یو ٹیلٹی سٹور کے حصہ میں تقریباََ24 من چینی آتی ہے۔ اگر ہر یوٹیلٹی سٹور پر 24 من چینی روزانہ فراہم کی جائے تو دو کلو فی گھرانہ کے حساب سے تقریبا 500 گھرانوں کو با آسانی چینی مہیا کی جا سکتی ہے۔ مگر یو ٹیلٹی سٹور ز پر چینی فراہم کرنے والا عملہ چینی دکانداروں کو فروخت کر دیتا ہے۔ اور ہر یو ٹیلٹی سٹور انچارج کو مطلوبہ رقم دے کر ان سے وصولی حاصل کر لیتا ہے۔گذشتہ دنوں کارپوریشن کا ایک ملازم حبیب نامی اپنے بھائیوں کو چک 81/6.R میں رات دس بجے کے قریب چینی سے لوڈ پک اپ فروخت کر رہا تھا کہ تھانہ فتح شیر نے شہری کی شکایت پر چھاپہ مار کر گرفتار کر لیا زونل مینجر نے ایس ایچ او سے ملاقات کر کے گاڑی اور ملازم کو چھڑا لیا جب ایس ایچ اوسے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ مجھے پتہ نہیں میں چیک کروا لیتا ہوں جبکہ ملزمان نے اپنے فون بند کر لیے ذرائع نے بتایا ہے کہ کچھ دولت مند لوگ جسے چینی مافیا کہا جا سکتا ہے۔ یو ٹیلٹی سٹور وں سے چینی خرید کر اپنے گھروں میں رکھ لیتے ہیں اور اپنی عورتوں کے ذریعے اپنے محلوں میں فروخت کر کے پیسہ کما رہے ہیں۔ ایسے ہی چک 82/ 6.R کے ایک زرعی ادویات کے مالک کے بارے میں ذرائع نے بتایا ہے کہ زرعی ادویات کی دکان کا مالک ان پڑھ ہے۔ اس نے محکمہ سے ساز باز ہو کر لائسنس حاصل کر رکھا ہے، اور وہ گرلز کالج روڈ کے یو ٹیلٹی سٹور کے انچارج سے مل کر چینی اپنے گھر میں فروخت کر رہا ہے۔ شہریوں نے وزیراعظم سے چینی چوروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ چینی مافیا کی سر پر ستی کارپو ریشن کا ایک اعلی افسر کر رہا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں