کمیر،سرکاری ہسپتال میں ڈاکٹر کی مبینہ غفلت سے مریض جاں بحق

ساہیوال(بیورورپورٹ)آر ایچ سی میں ڈاکٹر کی مبینہ غفلت سے مریض چل بسا،لواحقین کا وزیر صحت، سیکرٹری ہیلتھ اور ڈی سی کاروائی کا مطالبہ۔گزشتہ روز کچی آبادی کمیر کے رہائشی حنیف کو معمولی درد کی وجہ سے مقامی ہسپتال لا یا گیا جو ڈاکٹر کی مبینہ غفلت سے جان کی بازی ہار گیا۔مریض کے ورثاء کا کہنا ہے کہ جب مریض حنیف کو رورل ہیلتھ سنٹرکمیرلا یا گیا اسے معمولی درد تھا جبکہ ڈاکٹر عمران علی ڈیوٹی سے غائب تھے۔ایمرجنسی میں موجود نرس نے ڈاکٹر عمران علی سے فو ن پر رابطہ کیا تو ڈاکٹر کی ہدایت کے مطابق مریض کو بغیر تشخیص کے انجکشن لگا دیا جس سے مریض کی حالت غیر ہوگئی۔ایمرجنسی میں ایس ایم او ڈاکٹر مقبول ضیاء وارثی کو ڈاکٹر عمران کی غیر موجودگی اور مریض کی سیریس صورت حال سے آگاہ کیا گیا تو ایم او ڈاکٹر ارسلان کو کال کر کے جلد آر ایچ سی پہنچنے کو کہا گیا ایم او نے مریض کو سیریس جانتے ہوئے ریفر ٹو ڈی ایچ کیو کے لئے فوری 1122 کی خدمات حاصل کیں اس سے پہلے کہ مریض کو ریفر کیا جاتا تب تک بہت دیر ہو چکی تھی۔انہوں نے مزید بتا یا ہے کہ ڈاکٹر عمران علی کی نااہلی اور ڈیوٹی پر موجود نا ہونے کی کئی انکوائریاں پہلے بھی چل رہی ہیں لیکن بااثر ہونے کی وجہ سے کوئی ایکشن نہیں لیا گیا۔لواحقین نے وزیر صحت، سیکرٹری ہیلتھ اور ڈی سی ساہیوال سے آر ایچ سی کے ایس ایم او اور ڈاکٹر عمران علی کو فوری طور پر معطل کر کے شفاف انکوائری کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں