ساہیوال، کمشنر آفس میں کھلی کچہری، شکایتوں کے انبار لگ گئے

ساہیوال(بیور ورپورٹ) عوام کے مسائل فوری حل کرنے کیلئے کمشنر آفس میں کھلی کچہری کا انعقاد‘سائلین کے انفرادی اور اجتماعی مسائل پر کمشنر ساہیوال کا موقع پر ایکشن‘ متعلقہ محکموں سے 3 روز میں رپورٹ طلب‘شکایات کا زیادہ تر تعلق محکمہ ریونیو اور میونسپل کارپوریشن ساہیوال سے تھا۔تفصیلات کے مطابق عوام کو ریلیف فراہم کرنے اور مسائل کے حل کیلئے کمشنر آفس میں ہفتہ وار کھلی کچہری کا انعقاد کیا گیا جس میں ایڈیشنل کمشنر عبدالغفور چوہدری کے علاوہ تمام وفاقی و صوبائی محکموں کے ڈویژنل افسران نے شرکت کی۔ شہریوں کی بڑی تعداد نے اولڈ سول لائنزمیں سیوریج کی نئی لائن ڈالنے کے بعدپیچ ورک نہ کرنے اور مٹی کے ڈھیر نہ اٹھانے سے پہنچنے والی مشکلات کی شکایت کی جس پر کمشنر نے ایس ای پبلک ہیلتھ کو فوری ایکشن لینے کی ہدایت کی۔صابر ٹاؤن کے ایک رہائشی محمد اعجازنے باسیوں کی طرف سے گلیوں میں جانور باندھنے اور گند پھیلانے کی شکائت کی جس پر کمشنر ساہیوال عارف انور بلوچ نے چیف آفیسر ایم سی کو معاملہ حل کرنے کی ہدایت کی۔ کمشنر نے غیر قانونی ہاؤسنگ سکیموں کے خلاف بڑھتی ہوئی عوامی شکایات پر سی او کو تمام کالونیوں کے معاملات کی سکروٹنی کی ہدایت کی۔ کھلی کچہری میں ڈپٹی کمشنر آفس اوکاڑہ کے باورچی طالب حسین نے اپنی ملازمت پر بحالی کی درخواست کی جبکہ چک نمبر59/6D کے سید محمد نے ملکیتی زمین کی خسرہ گرداوری نہ کرنے پر پٹواری اور محکمہ ریونیو کے خلاف درخواست دی جس پر کمشنر نے اے سی ساہیوال کو ایکشن لینے کی ہدایت کی۔ کھلی کچہری میں محکمہ ہاؤسنگ کے افسر کی عدم شرکت کا سخت نوٹس لیتے ہوئے کمشنر عارف انور بلوچ نے سیکرٹری ہاؤسنگ کو خط لکھنے کی ہدایت کی کہ متعلقہ افسر کی عدم شرکت کی بدولت عوام کے مسائل حل نہیں ہورہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں