ساہیوال، آرٹس کونسل کے زیر اہتمام یوم اقبال کے موضوع پر سیمینار

ساہیوال (بیورورپورٹ)ساہیوال آرٹس کونسل کے زیر اہتمام ماہِ میلادالنبی ﷺ اور یوم اقبال کے تناظر میں ”علامہ اقبال اور سیرت النبیﷺ“ کے موضوع پر سیمینار منعقد ہوا۔ اس سیمینار کی صدارت چوہدری سلطان محمود نے کی۔پروفیسر محمد اکبر شاہ نے کلید ی خطبہ پیش کیا جبکہ پیر احسان الحق ادریس نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ ڈائریکٹر ساہیوال آرٹس کونسل نے اس استقبالیہ خطبہ دیتے ہوئے کہا کہ اسوہ کامل ﷺ کو معاشرے میں عملی طور پر اپنانے کی ضرورت ہے۔ ہمیں چاہیے کہ ہم سیرت النبیﷺ کی روشنی میں انسانیت اور اجتماعیت کو معاشرے میں عام کریں تاکہ بحیثیت مجموعی پاکستانی معاشرے کو صحت مند بنا سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کے علامہ اقبال ہمارے فکری رہنما ہیں اور ہمیں ان کے تصویرخانہ یعنی پاکستان کو ان کے تصور خودی اور تصور شاہین کے مطابق پروان چڑھائیں تا کہ ہم بطور پاکستانی قوم خود پر فخر کر سکیں۔پروفیسر محمد اکبر شاہ نے علامہ اقبال کے نوجوانوں کے لیے پیغام کو موضوع بحث بناتے ہوئے کہا کہ اقبال نوجوان نسل کو قوم کا مستقبل سمجھتے ہیں اور انہی سے امیدیں وابستہ کیے ہوئے ہیں۔ اس ضمن میں اقبال اور عشق روسولﷺ کے حوالے سے ایمان افروز گفتگو کی گئی جس میں سرورکونین ﷺ کی علم و عمل بارے ہدایات کو زیر بحث لایا گیا۔ پیر احسان الحق ادریس نے اس موقع پر کہا کہ ہمیں اپنے قو ل و فعل کے تضاد کو ختم کر کے حضوراکرمﷺ کی سیرت کی پیروی کرنی چاہیے۔ انہوں نے باہمی اختلافات کو ختم کرکے پاکستانیت کو فروغ دینے اور فرقہ پرستی سے دور رہنے کی بات کی۔اس سیمینار کی صدارت کرتے ہوئے معروف سماجی شخصیت چوہدری سلطان محمود نے علامہ اقبال کے ان نظریات کو نمایاں کیا جن میں اقبال نے امت مسلمہ کی عظمت رفتہ اور موجودہ بے عملی کا تقابلی جائزہ پیش کیا۔ان کے بقول نظریہ اسلام پر قائم ہونے والے اقبال کے پاکستان نے ہمیں بہت کچھ عطا کیا لیکن سوال یہ ہے کہ کیا ہم اپنے ملک و قوم کی پروقار حیثیت کو منوانے میں کامیاب ہوسکے؟ہمیں چاہیے کہ سیرت النبی ﷺ اور افکار اقبال کی روشنی میں وطن کو عظیم تر بنائیں۔اس تقریب میں طلباء کے علاوہ طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ مقررین اور حاضرین نے اس سیمینار کی اہمیت اور افادیت کو سامنے رکھتے ہوئے ساہیوال آرٹس کونسل کی اس کاوش کو خوب سراہا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں