ساہیوال،آڈٹ کے نام پر سکول سربراہان سے رشوت لینے کا انکشاف

ساہیوال(ایس این این) ساہیوال کے سرکاری سکولز سے نان سیلری بجٹ کا آڈٹ کلئیر کروانے کے لیے آڈیٹر کو 2 ہزار روپے فی سکول رشوت دئیے جانے کا انکشاف، سرکاری سکولوں کو جاری ہونے والے نان سیلری بجٹ میں جائز خرچ کرنے کے باوجود فی سکول 2 ہزار روپے لیے جارہے ہیں. تفصیل کے مطابق ساہیوال میں پرائمری سے سیکنڈری لیول تک کے سکولز کے نان سیلری بجٹ کا آڈٹ جاری ہے. ذرائع کے مطابق بوائز ونگ کے تمام سکولز کے ہیڈ ماسٹر صاحبان سے 2 ہزار روپے آڈیٹر کو دینے کے لیے لیے گئے ہیں۔ سرکاری سکولوں جن میں پرائمری، مڈل ، ہائی اور ہائر سیکنڈری سکولوں میں طلبا کو بہتر تعلیمی ماحول فراہم کرنے اور دیگر اخراجات کے لئے حکومت نے نان سیلری بجٹ کے نام کر سکولوں کو لاکھوں روپے دیئے گئے تھے. اس فنڈ‌سے گزشتہ برس ایجوکیشن افسران کی جانب سے اپنے پسندیدہ ٹھیکے دار سے کمیشن لے کر فرنیچر اور دیگر سامان خریدنے کا معاملہ بھی سامنے آیا تھا تا ہم اس پر کوئی کارروائی نہیں‌ہو سکی. گزشتہ برس بھی سکولز کے سربراہان سے فنڈ خرچ کرنے یا نہ کرنے کی صورت میں بھی 3 ہزار روپیہ لیاتھا تا ہم اس بار 2 ہزار روپے فی سکول وصول کرنے کا سلسلہ جاری ہے. ذرائع کا کہنا ہے کہ آڈیٹر کو ایک نجی ہوٹل میں ٹھہرایا گیا ہے اور قیام و طعام پر روزانہ ہزاروں روپے خرچ کیے جا رہے ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں