ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ کر دیا گیا

ایمسٹرڈیم(ایس این این ) دنیا بھر میں مسلمانوں کے احتجاج کے باعث ہالینڈ میں ہونے والا گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منسوخ کردیا گیا۔خبررساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق ہالینڈ کے رکن پارلیمنٹ گیرٹ ولڈر نے گستاخانہ خاکوں کا مقابلہ منعقد کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے باعث دنیا بھرمیں مسلمانوں کی جانب سے شدید ردعمل دیکھنے میں آیا اور مختلف ممالک میں اس کے خلاف مسلسل احتجاج جاری ہے اب وہ مقابلہ منسوخ کردیا گیا ہے۔پاکستان نے بھی اس معاملے پر ملکی و عوامی سطح پر شدید احتجاج ریکارڈ کرایا ہے، وزیر اعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ اس معاملے کو او آئی سی اور اقوام متحدہ میں اٹھایا جائے گا جس کے لیے وزیر خارجہ کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔آج وزیر اعظم کا اس ضمن میں تفصیلی ویڈیو بیان بھی منظر عام پر آیا تھا جس میں اس مقابلے پر سخت ردعمل دینے کا عندیہ ظاہر کیا گیا تھا. پاکستانی عوام کی جانب سے اس پر شدید احتجاج جاری ہے. سوشل میڈیا پر باقاعدہ ایک مہم چلائی جا رہی جس میں‌ہالینڈ کی مصنوعات اور سفارتی تعلقات ختم کرنے کی تجاویز پیش کی گئی ہیں.پاکستان کے مختلف شہروں میں مختلف جماعتوں کی جانب سے بھی احتجاج جاری ہے جن کا ایک مطالبہ ہے کہ ہالینڈ کے سفیر کو ملک بدر کرکے ہالینڈ کی حکومت سے سخت جواب طلب کیا جائے۔تا ہم اب ہالینڈ حکومت کیا جانب سے اس مقابلے کی باقاعدہ منسوخی کااعلان کر دیا گیا ہے. امرکی ذرئاع ابلاغ کے مطابق پاکستانی کمپنیز کی جانب سے ہالینڈ کے ساتھ کاروبار بند کرنے کے اعلان اور سفارتی ردعمل سے مجبور ہو کر ہالینڈ حکومت نے اس مقابلے کی منسوخی کا اعلان کیا ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں