ساہیوال، ڈی ایچ کیوہسپتال نوآموز ڈاکٹرز کی تجربہ گاہ بن گئی

ساہیوال (بیورورپورٹ)ڈسٹرکٹ ٹیچنگ ہسپتال ایمر جنسی جونیئر ڈاکٹرز کے لئے تجربہ گاہ بن گیا‘ایمر جنسی میں آنے والے مریضوں کی درد کی شدت کم کرنے کیلئے 6/7 ٹیکے لگا ئے جانے لگے‘سینئر ڈاکٹر نہ ہونے سے مریض پریشان ہوکر رہ گئے۔ ایمر جنسی میں سینئر ڈاکٹرز لگانے کامطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق ساہیوال اور گردونواح سے مختلف امراض میں مبتلا مردوخواتین کو جب ان کے لواحقین ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کی ایمر جنسی میں لاتے ہیں تو وہاں پر موجود ہاؤس جاب کرنے والے مردوخواتین ڈاکٹرز مریضوں کی درد کی شدت کو کنٹرول کرنے کے لئے 6/7ٹیکے لگا کر تجربے کرتے ہیں۔ مریضوں کی درد میں کمی نہ آنے کی وجہ سے باربار ٹیکے جاتے ہیں جب انہیں آرام نہیں آتا تو پھر کوئی نہ کوئی ٹیسٹ لکھ دیاجاتاہے اس طرح جونیئر ڈاکٹرز تشخیص نہ کرنے کی وجہ سے مریض اور ان کے لواحقین کو انتہائی پریشان کردیتے ہیں۔ شہریوں کا کہناہے کہ ایمر جنسی میں سینئر تجربہ کار ڈاکٹرز نہ ہونے سے عوا م پریشان ہیں اور اس بارے متعدد بار توجہ دلائی گئی ہے لیکن متعلقہ حکام نوٹس نہیں لے رہے۔ شہریوں نے کمشنر‘ڈپٹی کمشنر اور دیگر صحت کے متعلقہ حکام سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں